ادویات نہ ملنے پرمریضوں کا کارڈیالوجی انتظامیہ کیخلاف احتجاج

 ادویات نہ ملنے پرمریضوں کا کارڈیالوجی انتظامیہ کیخلاف احتجاج

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ملتان(وقائع نگار)کارڈیالوجی ہسپتال ملتان  سے ادویات نہ ملنے پر دور دراز سے آنے والے مریضوں نے ریس کلب کے باہر احتجاج کرتے ہوئے  کا(بقیہ نمبر2صفحہ7پر)

رڈیالوجی انتظامیہ کے خلاف  شدید نعرے بازی کی اس موقع پر بزرگ مریضوں کا کہنا تھا کہ بھاری کرائے بھر کر آئے آگے ادویات نہیں مل رہی کبھی کہتے چیک اپ کراو کبھی کہتے آج تمہارا دن نہیں ہے ہم دل شوگر کے مریض ہیں سڑکوں پر دھکے کھا رہے ہیں ہسپتال میں کوئی رہنمائی تک نہیں کر رہا مجبور ہو کر احتجاج کر رہے ہیں نگراں وزیر اعلی پنجاب محسن نقوی دور دراز سے آنے والے مریضوں کیلئے کارڈیالوجی میں ادویات کی فراہمی کو یقینی بنائیں بصورت دیگر سڑکوں پر جان دے دیں گے ادھر ایم ایس کارڈیالوجی ہسپتال ڈاکٹر اقبال کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ دل کے تمام رجسٹرڈ مریضوں کو بغیر کسی تعطل کے ادویات فراہم کی جا رہی ہیں جمعرات کو بھی تقریبا 2 ہزار مریضوں کو ادویات دی گئیں روزانہ تقریبا 2500 سے 2800 مریضوں کو ادویات فراہم کی جا رہی ہیں جن مریضوں نے احتجاج کیا وہ آن لائن سسٹم کے تحت رجسٹرڈ ہونے سے انکاری تھے نئے سسٹم کے تحت مظفر گڑھ پاکپتن وہاڑی اور خانیوال کے مریضوں کو کہا گیا ہے کہ ان کی آن لائن رجسٹریشن کی جائیگی جس کے بعد انہیں ادویات کیلئے  کارڈیالوجی ہسپتال آنے کی ضرورت نہیں بلکہ ان کے متعلقہ اضلاع کے ڈی ایچ کیو سے انہیں ادویات ملیں گی بس فائل پر دئیے گئے دن کے تحت صرف معائنہ کروانے ملتان کارڈیالوجی آنا ہو گا جس کے بعد ادویات انکے اضلاع کے ڈی ایچ کیو پہنچا دی جائیں گی تاہم کچھ مریض بضد تھے وہ ایسا نہیں کرنا چاہتے جس پر انہیں یہ بھی کہا گیا کہ دئیے گئے دن پر  اپنا چیک اپ کروائیں اور ادویات لے لیں تاہم وہ بغیر کسی چیک اپ اور خود کو رجسٹرڈ کروانے سے انکاری تھے###کیپشنملتان: کارڈیالوجی ہسپتال ملتان آئے مریض ادویات نہ ملنے پر پریس کلب کے باہر احتجاج کر رہے ہیں