چلڈرن کمپلیکس، نمونیہ کے مزید2 مریض بچے جاں بحق

چلڈرن کمپلیکس، نمونیہ کے مزید2 مریض بچے جاں بحق

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ملتان(وقائع نگار)چلڈرن کمپلیکس ملتان میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران نمونیہ میں مبتلا دو اور  مریض  بچے دم توڑ گئے، ایک ماہ کے دوران چلڈرن کمپلیکس میں نمونیہ میں مبتلا 44 بچے دم توڑ چکے  ہیں، محکمہ  سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر جنوبی پنجاب تین دن جاگنے کے بعد پھر(بقیہ نمبر8صفحہ7پر)

 سو گیا نشتر انتظامیہ کی غیر سنجیدگی عروج پر تفصیل کے مطابق ملتان سمیت جنوبی پنجاب اندرون سندھ بلوچستان کے مریض بچوں کا بوجھ اٹھانے والے چلڈرن کمپلیکس میں ترجمان چلڈرن کمپلیکس ملتان ڈاکٹر معاز کے مطابق گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران دو مریض بچے دم توڑ چکے ہیں جبکہ یکم جنوری سے 31 جنوری 2024 کے درمیان نمونیہ چیسٹ انفیکشن کے شکار 1ہزار 240 بچے چلڈرن کمپلیکس رپورٹ ہوئے رپورٹ ہونے والے نمونیہ میں مبتلا بچوں میں سے 31 روز کے دوران 44 بچوں نے چلڈرن کمپلیکس میں دم توڑا جبکہ 1 ہزار 113 بچے صحت یاب ہو کر گھروں کو واپس چلے گئے جبکہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران چلڈرن کمپلیکس میں نمونیہ میں مبتلا 20 مزید بچے رپورٹ ہوئے یوں اس وقت نمونیہ چیسٹ انفیکشن میں مبتلا 83  مریض  بچے چلڈرن کمپلیکس میں زیر علاج ہیں  جبکہ سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر جنوبی پنجاب رانا افضل ناصر خاں کو ایکسپریس کی جانب سے مسلسل جگانے پر چند روز قبل تین دن کے لئے ہوش آیا جنہوں نے دو سے تین  دن نمونیہ کے حوالے سے ڈیٹا شئیر کیا جس کے بعد سے نمونیہ سے متعلق کوئی اپ ڈیٹ فراہم نہیں کی گئی جبکہ نشتر ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے صرف ایک دن نمونیہ سے متعلق اپ ڈیٹ کیا گیا جس کے بعد سے ڈیٹا تک مرتب نہیں کیا جا سکا ہے