عسکریت پسندوں کی سرگرمیوں میں اضافہ، جنوری میں دہشتگردی کے کتنے واقعات ،کتنے افراد ہلاک ، کتنے اغواء ہوئے ؟ سیکیورٹی رپورٹ میں اہم انکشافات

عسکریت پسندوں کی سرگرمیوں میں اضافہ، جنوری میں دہشتگردی کے کتنے واقعات ...
عسکریت پسندوں کی سرگرمیوں میں اضافہ، جنوری میں دہشتگردی کے کتنے واقعات ،کتنے افراد ہلاک ، کتنے اغواء ہوئے ؟ سیکیورٹی رپورٹ میں اہم انکشافات

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد( خصوصی رپورٹ ) تھنک ٹینک پاکستان انسٹی ٹیوٹ فار کانفلیکٹ اینڈ سیکیورٹی سٹڈیز (پکس) نے سیکیورٹی رپورٹ جاری کی ہے ۔ رپورٹ میں اہم اعدادوشمار پیش کیے گئے ہیں جن کے مطابق عام انتخابات قریب آ رہے ہیں اور دہشتگردی کے واقعات میں بھی اضافہ ہو رہا ہے۔ جنوری 2024 ،ملک بھر میں دہشتگردی کے 93 واقعات،90 افراد چل بسے ، 135 زخمی، 15 افراد کو اغوا ءکیا گیا،سب سے زیادہ حملے بلوچستان میں ہوئے،رواں سال کے پہلے مہینے میں 2023 کے آخری مہینے کے مقابلے میں حیران کن طور پر 102 فیصد اضافے کے ساتھ عسکریت پسندوں کی سرگرمیوں میں واضح اضافہ دیکھنے میں آیا ۔ 

وفاقی دارالحکومت میں قائم تھنک ٹینک پکس کی جاری کردہ سیکیورٹی رپورٹ کے مطابق جنوری 2024 میں ملک بھر میں دہشتگردی کے کم از کم 93 واقعات پیش آئے جن میں 90 افراد ہلاک ، 135 زخمی ہوئے، اور 15 افراد کو اغوا ءکیا گیا۔ جنوری 2024 میں اموات میں 15 فیصد اور زخمیوں میں 19 فیصد اضافہ رپورٹ ہوا۔ مارے جانے والوں میں 41 عام شہری، 37 سیکیورٹی فورسز کے اہلکار اور 12 عسکریت پسند شامل ہیں۔ زخمیوں میں 81 شہری اور 54 سیکیورٹی فورسز کے اہلکار شامل ہیں۔سب سے زیادہ حملے بلوچستان میں ہوئے جہاں 33 حملوں میں 31 افراد ہلاک اور 50 زخمی ہوئے۔