عالمی تحریک تحفظ حرمین شریفین کا استنبول میں دہشتگردی کے واقعہ پرسخت احتجاج

عالمی تحریک تحفظ حرمین شریفین کا استنبول میں دہشتگردی کے واقعہ پرسخت احتجاج

لاہور (نمائندہ خصوصی ) امت مسلمہ کے تمام مکاتب فکر کی نمائندہ بین الاقوامی جماعت ’’عالمی تحریک تحفظ حرمین شریفین ‘‘پاکستان کے امیر علامہ حافظ زبیر احمد ظہیرسینئر نائب امیر علامہ محمد ممتاز اعوان ،مفتی عاشق حسین،پیر ولی اللہ شاہ ،میاں محمد طاہر ،مولانا عبد الستار نیازی،میاں محمد اصغراور مولانا محمد آصف ربانی نے ہیڈ آفس عالمی تحریک فردوس مارکیٹ گلبرگ میں تحریک کی قومی کونسل کے منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ترکی کے شہر استنبول میں بدترین دہشتگردی کے نتیجہ میں درجنوں بے گناہ افراد کی ہلاکت اور بیسیوں کے شدید زخمی ہونے پر سخت احتجاج کیا ہے اور اسے مسلم دشمن قوتیں سامراج کی انتہائی گھناؤنی ناپاک سازش قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ پاکستان اور سعودیہ عرب کے بعد اب مسلمانوں کے ایک عظیم ملک ترکی میں حالیہ دہشتگردی کی لہر بڑے مسلم ممالک کو غیر مستحکم کرنیکی گہری سازش اور منصوبہ ہے ان حالات میں 57مسلم ممالک کے حکمرانوں کو مشترکہ لائحہ عمل اپنانا چاہیے کیونکہ مسلم ممالک میں دہشتگردی اسلام دشمن کفار کی غیر اعلانیہ جنگ ہے جسکا امت مسلمہ متحدہوکر ہی مقابلہ کرسکتی ہے۔نیز ان راہنماؤں نے شام کے شہر حلب کو صفحہ ہستی سے مٹانے اور اتنے بڑے انسانی المیے پر عالمی اداروں کی خاموشی کو انتہائی مجرمانہ قرار دیتے ہوئے سخت احتجاج کیا ہے اور کہا ہے کہ برما ،کشمیر و شام میں انسانیت کا بہتا خون اقوام متحدہ ،سلامتی کونسل،انسانی حقوق کی نام نہاد بین الاقوامی تنظیموں ایمنسٹی انٹرنیشنل ودیگر عالمی اداروں کو نظر کیوں نہیں آرہا جو انکی دوغلی پالیسی اور مسلم دشمنی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1