پی ایس ایل دوسرے ایڈیشن کو کرپشن سے پاک رکھنے کیلئے منتظمین کمر بستہ

پی ایس ایل دوسرے ایڈیشن کو کرپشن سے پاک رکھنے کیلئے منتظمین کمر بستہ

کراچی(سپورٹس ڈیسک) پی ایس ایل کے دوسرے ایڈیشن کو کرپشن سے پاک رکھنے کیلئے منتظمین نے کمر کس لی،ناپسندیدہ عناصر پر کڑی نظر رکھنے کیلئے خصوصی سسٹم وضع کیا جائے گا،آئندہ ماہ کے تیسرے ہفتے میں ورکشاپ کا اہتمام ہوگا،ایونٹ شروع ہونے سے قبل کرکٹرز اور معاون اسٹاف کو لیکچرز دیے جائیں گے۔تفصیلات کے مطابق پی ایس ایل کے پہلے ایڈیشن میں فکسنگ یا ناپسندیدہ عناصر کی موجودگی کا کوئی واقعہ سامنے نہیں آیا، البتہ آئی پی ایل اور بی پی ایل سمیت دنیا بھر میں کئی ٹی 20 لیگز کرپشن سے آلودہ نظر آتی ہیں،اس لیے اس بار پی ایس ایل کے منتظمین پہلے سے بھی زیادہ چوکنا ہیں، انھوں نے ایونٹ کو فکسنگ اور کرکٹرز کو ہنی ٹریپ میں الجھانے کی کوششوں کا سدباب کرنے کیلئے کمر کس لی ہے۔سینئر جنرل منیجر ویجیلنس کرنل(ر)محمد اعظم خان نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پہلے ایڈیشن کا کامیابی کے بعد ہمیں مزید محتاط رہنے کی ضرورت ہے، ناپسندیدہ عناصر پر کڑی نظر رکھنے کیلئے خصوصی سسٹم وضع کیا جائیگا،آئندہ ماہ کے تیسرے ہفتے میں ورکشاپ کا اہتمام ہوگا جس میں آئی سی سی اینٹی کرپشن ماہرین، فرنچائز اور پی ایس ایل مینجمنٹ کے ارکان شریک ہوں گے۔پی سی بی اور پلیئرز کوڈ آف کنڈکٹ کی پاسداری یقینی بنانے کیلئے ہر ٹیم کیساتھ ایک اینٹی گریٹی آفیسر کا تعین کیا جائیگا، یہ آفیشلز کھلاڑیوں کو ہنی ٹریپ میں الجھانے کی کوششوں پر بھی نظر رکھیں گے، ایک ادارہ جوئے کی مارکیٹ میں کسی غیر معمولی سرگرمی کو بھی مانیٹر کرتا رہے گا، فروری میں ایونٹ شروع ہونے سے قبل بھی کرکٹرز اور معاون اسٹاف کو لیکچرز میں تعلیم اور بچا کے طریقوں سے آگاہ کیا جائے گا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی