ملکی ہاکی کیلئے نیا سال پچھلے سال سے بہتر ہوگا:طاہر زمان

ملکی ہاکی کیلئے نیا سال پچھلے سال سے بہتر ہوگا:طاہر زمان

لاہور( سپورٹس رپورٹر)قومی جونیئر ہاکی ٹیم کے سابق ہیڈ کوچ و اولمپیئن طاہر زمان نے کہا ہے کہ پی ایچ ایف کی نئی مینجمنٹ کی طرف سے ہاکی کے کھیل کی ترقی کے لئے 2016میں کئے گئے اقدامات کے مزید مثبت نتائج 2017میں سامنے آئیں گے اور انشاء اللہ ملکی ہاکی کے لئے نیا سال پچھلے سال سے بہتر ہوگا ۔نیشنل ہاکی سٹیڈیم لاہور میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ پی ایچ ایف کی مینجمنٹ کی طرف سے ہاکی کے کھیل کی ترقی کے لئے جو اقدامات شروع کیئے گئے ہیں اگران میں کوئی رکاوٹ نہ آئی اور ان کا تسلسل جاری رہا تو آئندہ تین سالوں میں پاکستان کی ہاکی اپنے پاؤں پر کھڑی ہوجائے گی۔ سال 2016میں قومی ہاکی ٹیم کی نئی مینجمنٹ نے گراس روٹ سطح پر بہت زیادہ توجہ دی ،ہاکی کے کھیل میں نوجوانواں کے لئے زیادہ سے زیادہ دلچسپی پیدا کرنے کے لئے ہاکی فائیو ،ہاکی نائن کے ٹورنامنٹس کروائے گئے ۔کھلاڑیوں کے لئے روزگار کا بندوبست کیا گیا ۔قومی ہاکی چیمپئن شپ کا انعقاد کروایا گیا ،سینئر اور جونیئر ہاکی ٹیموں کو انٹرنیشنل ٹورنامنٹس میں شرکت کروانے کے علاوہ بے شمار دیگر اقدامات کیئے گئے ۔پروفیشنل لیگ کا انعقاد کروانے کی کوشش کی گئی لیکن اس کے لئے این او سی نہ مل سکا اور اب یہ لیگ 2017میں ہوگی ،جونیئر ٹیم کی جونیئر ورلڈ کپ کے لئے بھرپور تیاری کروائی گئی لیکن بھارت نے قومی جونیئر ٹیم کو ویزے نہ جاری کرکے انہیں جونیئر ورلڈ کپ سے محروم رکھا ۔بھارت نے پاکستان ٹیم کے بغیر جونیئر ورلڈ کپ جیتا۔طاہر زمان نے کہا2017کا سال قومی ہاکی کے لئے ایک چیلنجنگ سال ہے ۔ٹیم نے ورلڈ کپ کوالفائر کھیلنا ہے اور امید ہے کہ ٹیم اس چینج پر پورا اترے گی ۔اگلے جونیئر ورلڈ کپ کے لئے ہمارے پاس کافی وقت ہے اور امید ہے کہ ہماری ٹیم اگلے جونیئر ورلڈ کپ میں قوم کی توقعات پر پوری اترے گی ۔طاہر زمان نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ نئے سپر سٹار کھلاڑی حاصل کرنے کے لئے پہلے سپر سٹار کوچز کا ہونا بہت ضروری ہے جو کہ کھلاڑیوں کو اعلی کوالٹی کی ٹریننگ دے سکے ۔کھلاڑیوں کے اندر محنت کا جذبہ ہونا چاہئے ،۔انہیں ہر طرح کی سہولیات مہیا کی جانی چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ہاکی کا بہت ٹیلنٹ ہے ،نیک نیتی اور دلجمعی سے کوشش کی جائے تو اب بھی سمیع اللہ ،شہباز سینئر ،حسن سردار ،منظور جونیئر ،کلیم اللہ ،حنیف خان جیسے سپر سٹار کھلاڑی سامنے آسکتے ہیں ۔طاہر زمان نے کہاکہ جونیئر کھلاڑیوں پر کی گئی محنت سے قومی سینئر ٹیم کو متعدد نئے کھلاڑی ملیں گے ۔پہلے 30-35کھلاڑیوں کے پول میں سے ٹیم کی سلیکشن ہوتی تھی لیکن اب جونیئر کھلاڑیوں کے پول کی وجہ سے 70کھلاڑیوں میں سے ٹیم کی سلیکشن ہوگی اور مقابلہ کی فضا کی وجہ سے ہر کھلاڑی ٹیم کا حصہ بننے کے لئے زیادہ سے زیادہ محنت اور پرفارمنس دکھانے کی کوشش کرے گا ۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی