شان رسالتﷺ میں گستاخی برداشت نہیں ، غلام عباس صدیقی

شان رسالتﷺ میں گستاخی برداشت نہیں ، غلام عباس صدیقی

لاہور(خبرنگار) شان رسالتﷺ میں گستاخی برداشت نہیں ،سلمان تاثیر کے بیٹے کا بیان توہین رسالتﷺ کے زمرے میں آتا ہے حکومت ایکشن لے ،گستاخوں کی حمایت کرنے والے بھی گستاخ ہی ہیں،چیئرمین اسلامی تحریک طلبہ پاکستان غلام عباس صدیقی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ناموس رسالتﷺ پر سمجھوتا نہیں ہو سکتا سلمان تاثیر کے بعد اس کے بیٹے شان تاثیر کی طرف سے قانون رسالت ﷺ کو غیر انسانی قرار دے کر ملعونہ آسیہ مسیح سے ہمدردی کرنے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ شان تاثیر کا یہ بیان توہین رسالتﷺ کے زمرے میں آتا ہے۔

حکومت عملی اقدام کرے اور 295.C کے تحت مقدمہ درج کرکے اس کے خلاف کاروائی عمل میں لائے بصورت دیگر کوئی ممتاز قادری شہید ؒ کا روحانی بیٹا اٹھ کھڑا ہوا تو پاکستان ہی نہیں دنیا بھر کی برگر فیملی طوفان بدتمیزی برپا کردے گی انہوں نے کہا کہ مسلمان ناموس رسالتﷺ پر کوئی سمجھوتا نہیں کر سکتے ،نبی مہربان ﷺ کی عزت وناموس پر سب کچھ قربان کردیں گے گستاخوں کو نشان عبرت بنانا حکومت کا اولین فرض ہے ،حکومت اگر اپنی رٹ بحال رکھنا چاہتی ہے تو ناموس رسالتﷺ ایکٹ کے مطابق گستاخان رسول ﷺ کے خلاف کاروائی عمل میں لائے ۔اسلامی تحریک طلبہ کے سربراہ نے کہا ہے کہ پاکستان اس لئے نہیں بنایا گیا تھا کہ یہاں پر عاشقان رسول ﷺ کوپھانسیاں اور گستاخوں کو رہائی اور پروٹوکول دیا جائے اگر حکومت نے شان تاثیر کے بیان کے خلاف اقدام نہ کئے تو دینی قوتیں احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہو جائیں گی۔حکومت گستاخان رسول ﷺ کے خلاف عملی اقدام کرے ورنہ عاشقان رسول ﷺ قانون ہاتھ میں لینے پر مجبور ہو جائیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4