پانچ فلسطینی شہری صہیونی زندانوں میں قید کے نئے سالوں میں داخل ہوگئے

پانچ فلسطینی شہری صہیونی زندانوں میں قید کے نئے سالوں میں داخل ہوگئے

رام (اے این این)اسرائیلی جیلوں میں قید پانچ فلسطینی شہریوں کی قید کا مزید ایک سال مکمل ہوگیا جس کے بعد اسیران قید کے نئے سالوں میں داخل ہوگئے ہیں۔ ان اسیران میں ایک عمر قید کا سزا یافتہ اسیر بھی شامل ہے۔ پانچوں فلسطینی مقبوضہ مغربی کنارے ،غزہ کی پٹی اور 1948 کے مقبوضہ علاقوں سے تعلق رکھتے ہیں۔فلسطینی میڈیا رپورٹس کے مطابق قید کا مزید ایک سال مکمل کرنے والے اسیران میں 39 سالہ منذر نایف متعب صنعوبر(رہائشی تعلق بیت المقدس)شامل ہیں۔

متعب صنوبر کو سنہ 2003 میں حراست میں لیا گیا اور ان پر فلسطینی مزاحمت کاروں سے تعلق اور یہودی آباد کاروں پر حملوں کے الزام میں مقدمات چلائے گئے۔ اسرائیلی عدالت نے صنوبر کو 4 بار عمر قید اور 30 سال اضافی قید کی سزا کا حکم دیا۔ اس میں سے 13 سال قید وہ پوری کرچکے ہیں۔قید کے نئے برسوں میں داخل ہونے والے فلسطینی قیدیوں میں 33 سالہ عبدالطیف مصطفی عبدالطیف طویل کا تعلق غرب اردن کے شمالی شہر طولکرم سے تعلق ہے۔ عبدالطیف طویل بھی 2003 سے پابند سلاسل ہیں اور انہیں 16 سال قید کی سزا کا سامنا ہے جن میں سے 13 سال قید وہ پوری کرچکے ہیں۔قید کے نئے سال میں داخل ہونے والے فلسطینیوں میں 2004 سے 13 سال قید کے سزا یافتہ فلسطینی ولید محمد حسن عنیص اسیری کے 12 ویں سال میں داخل ہوگئے ہیں۔اسیری کے نئے برس میں داخل ہونے والے اسیران میں 49 سالہ ابراہیم احمد عزام الزوارعہ کا تعلق غزہ کی پٹی سے ہے او وہ 16 سال قید کے تحت پابند سلاسل ہیں۔ انہیں 2009 کو غزہ کی پٹی سے گرفتار کیا گیا تھا۔رپورٹس کے مطابق دسمبر 2016 کے مہینے میں اسرائیلی جیلوں میں قید 271 فلسطینی اسیران قید کے نئے سالوں میں داخل ہوئے۔

مزید : عالمی منظر