صوابی ،ٹوبیکو مزدور اتحاد سی بی اے اور فلپ مورس اتنظامیہ کے درمیان چاٹر آف ڈیمانڈ پر مذارکرات ناکام

صوابی ،ٹوبیکو مزدور اتحاد سی بی اے اور فلپ مورس اتنظامیہ کے درمیان چاٹر آف ...

صوابی( بیورورپورٹ) ٹوبیکو مزدور اتحادسی بی اے اور فلپ مورس انتظامیہ کے درمیان چاٹر آف ڈیمانڈ پر مذاکرات ناکام ہوگئے یونین نے سٹرائیک نوٹس جمع کردیاان خیالات کااظہار فلپ مورس کمپنی لیبر یونین کے صدر حسین احمد قریشی اور جنرل سیکرٹری طاہر محمد نے ایک مشترکہ بیان میں کیا انہوں نے کہا کہ گزشتہ دس ماہ سے ہمارا چارٹر آف ڈیمانڈ فلپ مورس انتظامیہ کے ساتھ التوا کا شکار ہے یہاں تک کہ سابق سی بی اے نے سٹرائیک نوٹس بھی جمع کیا تھا لیکن جب ہم نے ریفرینڈم جیت لیا تو انتظامیہ کے ساتھ بھتر تعلقات استوار کرانے کی خاطر ہم نے سٹرائیک نوٹس کو واپس لیا اس امید کے ساتھ کہ کپمنی انتظامیہ جلد از جلد ہمارے جائز ڈیمانڈذ کو منظور کرائینگے لیکن افسوس ایسا بلکل نہیں ہوا بلکہ ایک طرف کپمنی انتظامیہ نے ہمیں سی او ڈی میٹنگز میں مشغول رکھا دوسری طرف کمپنی نے وی ایس ایس سکیم لانچ کیا اور ساتھ ہی دو پرچیز سنٹرز( یار حسین 1ڈپواور شیرگڑہ ڈپو) کو حکومتی اجازت نامے کے بغیر بند کردیں تاکہ سی ایل اے سٹاف پریشر میں آکر وی ایس ایس سکیم میں اپلائی کرسکیں۔ مندرجہ بالا حقائق کی روشنی میں سی بی اے اس نتیجے پر پہنچی ہے کہ کمپنی انتظامیہ ہم سے بلکل مخلص نہیں ہے لہذا ہم مجبور ہوکر اپنا قانونی حق استعمال کرتے ہوئے آج سٹرائیک نوٹس جمع کررہے ہیں جب تک منسلک چارٹر آف ڈیمانڈ منظور نہیں کیاجاتا اور کمپنی انتظامیہ ہمیں ہماری جاب سکیورٹی نہیں دیتی تو اس وقت تک ہمارا پُرامن احتجاج جاری رہیگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر