ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل سے ترقی و خوشحالی آئیگی:محمود خان

ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل سے ترقی و خوشحالی آئیگی:محمود خان

مٹہ (نمائندہ پاکستان) پاکستان تحریک انصاف ملاکنڈ ڈویژن کے صدر اورصوبائی وزیرکھیل ‘ثقافت‘اثارقدیمہ اور امورنوجوانان محمود خان نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی حکومت عوام کی تقدیر بدلنے کے مشن پر گامزن ہے ۔انہوں نے کہا کہ اب ایس ایم ایس کا دور گزر چکا ہے ،نوکریاں نہیں بکتیں اور نہ ہی اپنوں کوسرکاری وسائل سے نوازا جاتا ہے بلکہ ہر کام ایک شفاف نظام اور میرٹ کی پالیسی کے تحت ہوتے ہیں۔ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے یونین کونسل چپریال مٹہ سوات میں ایک عظیم الشان اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر تحصیل مٹہ سوات کے ناظم عبد اللہ خان‘تحصیل نائب ناظم محمد حکیم خان‘ضلعی کونسلر بہاد رخان‘تحصیل کونسلر عادل خان کے علاوہ عمائدین علاقہ اور عوام بھی کثیر تعدادمیں موجود تھے۔اجتماع کے دوران عوامی نیشنل پارٹی سے60سالوں سے وابستہ اہم شخصیات سید عظیم خان‘پرویز سپین دادا‘امیر زرین خان‘محمد رسول خان‘سیف الملوک‘باز‘نثار‘فتح خان‘شرافت علی خان اور عبد الجبار نے اپنے اپنے خاندانوں اور سینکڑوں ساتھیوں کے ہمراہ عوامی نیشنل پارٹی سے مستعفی ہوکر پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا اور کہا کہ ہم پی ٹی آئی کے مخلص قیادت اور علاقے کی تعمیر وترقی کیلئے صوبائی وزیرمحمود خان کے ریکارڈترقیاتی کاموں سے متاثر ہوکر اے این پی کو چھوڑ کر پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کررہے ہیں اور انشاء اللہ تاحیات محمود خان کے قیادت میں پی ٹی آئی کے مشن کو آگے بڑھانے کیلئے اپنا کردار ادا کریں گے ۔صوبائی وزیر محمود خان نے پی ٹی آئی میں شامل ہونے والے کارکنوں کو مبارکباد دیتے ہوئے اپنے جانب سے مکمل تعاون کا یقین دلایا اور کہا کہ وقت کا تقاضا ہے کہ ملک کے عوام پی ٹی آئی کے پر چم تلے عمران خان کی قیادت میں ملک سے کرپشن اور معاشرے سے ظلم نا انصافیوں کے خاتمے اور انصاف پر مبنی اسلامی معاشرے کے قیام کیلئے جدوجہد کریں۔انہوں نے کہا کہ بد قسمتی سے گزشتہ ادوار میں سرکاری افسران واہلکاران خوانین اور حکمرانوں کے حجروں میں پہلے اور دفاتر میں بعد میں حاضری دیتے تھے مگر موجودہ صوبائی حکومت نے ان فرسودہ روایات کا خاتمہ کرکے سرکاری اداروں پر عوام کا اعتماد بحال کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اب لالٹینوں کا دور گزر چکا ہے اور عوام میں سیاسی شعوربیدار ہوچکا ہے ۔ محمود خان کا کہنا تھا کہ پختونوں کے حقوق کے عالمبرداروں نے عوام سے پختونوں کے حقوق کے نام پر ووٹ حاصل کرکے ان کے حقوق کے حصول کی بجائے اپنے عیاشیوں اور ملیشیاء ‘دوبئی اور دیگر یورپی ممالک میں بینک بیلنس بنانے میں مصروف رہیں ۔ انہوں نے مذید کہاکہ اب لوگوں کو اسلام کے نام پر دھوکہ نہیں دیا جاسکتا ہے یہ لوگ اسلام نہیں بلکہ اسلام آباد چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم نے انتخابات کے دوران علاقے کے عوام سے صرف دو وعدے کئے تھے ایک مٹہ سے فاضل بانڈہ تک سڑک کی تعمیر اور دوسرا بجلی فیڈر کا تھااورآج اللہ تعالیٰ کے فضل وکرم سے مٹہ سے فاضل بانڈہ روڈ کو 65کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کیا گیا ہے اور اسی طرح مٹہ فیڈر2کی تنصیب بھی کی گئی ہے ۔انہوں نے علاقے میں ترقیاتی کاموں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اربوں روپے کی لاگت سے مختلف منصوبوں ‘سڑکوں‘پلوں‘طبی و تعلیمی اداروں کی تعمیر ومرمت ‘پینے کیلئے صاف پانی کی فراہمی ‘آبپاشی اور زراعت کے ترقی کیلئے ایریگیشن چینل‘بجلی وغیرہ کے منصوبے شامل ہیں ان سے حلقے میں ماضی کی محرومیوں کا آزالہ ہونے کے ساتھ ساتھ خوشحالی اور ترقی کے ایک نئے دور کا آغا ز ہو گا۔انہوں نے علاقے کے عوام سے کہا کہ وہ آپس میں باہمی اختلافات بالائے طاق رکھ کر من حیث القوم کے حثیت سے پی ٹی آئی کے حکومت کے ساتھ دیں۔سپاس نامے میں پیش کئے گئے مطالبات پر محمود خان نے علاقے کیلئے ایک ٹیوب ویل‘گرلز ہائی سکول کی منظوری‘ایک ٹرانسفارمر اور کھمبوں کی فراہمی کا اعلان کیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر