”ریٹائرمنٹ کی بات غصے اور مایوسی میں کہہ دی تھی“

”ریٹائرمنٹ کی بات غصے اور مایوسی میں کہہ دی تھی“
”ریٹائرمنٹ کی بات غصے اور مایوسی میں کہہ دی تھی“

  

سڈنی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان ٹیسٹ کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق نے ریٹائرمنٹ کی خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ریٹائرمنٹ سے متعلق نہیں بلکہ صرف اور صرف سڈنی ٹیسٹ کے بارے میں سوچ رہے ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ ”میں نے ریٹائرمنٹ کی بات غصے اور مایوسی میں کہہ دے تھی۔“

سڈنی ٹیسٹ سے قبل ریٹائرمنٹ کا اعلان کرسکتا ہوں:مصباح الحق

تفصیلات کے مطابق مصباح الحق نے سڈنی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ریٹائرمنٹ کی تمام خبروں کی تردید کی کرتے ہوئے کہا کہ ”وہ 2016ءتھا اور اب 2017ءہے۔ ریٹائرمنٹ کا بیان غصے اور مایوسی میں دیدیا تھا اور اب یہ بات پرانی ہو چکی ہے۔ ابھی ریٹائرمنٹ کے بارے نہیں سوچ رہا بلکہ تمام تر توجہ سڈنی ٹیسٹ پر مرکوز ہے۔“ان کا کہنا تھا کہ کھیلوں سے عملے سے لے کر کھلاڑیوں تک ہر ایک لڑنے کیلئے تیار ہے تو میں بھی تیار ہوں، مجھے اپنی بہترین کرکٹ کھیلنا ہو گی۔

واضح رہے کہ میلبورن ٹیسٹ میں اننگز اور 18 رنز کی حیران کن شکست پر مایوس مصباح الحق نے فوری ریٹائرمنٹ کا عندیہ دیا تھا اور کہا تھا کہ وہ حتمی فیصلہ آئندہ دو سے تین دن میں کریں گے۔اس بیان کے بعد مصباح الحق کی سڈنی میں ہونے والے تیسرے ٹیسٹ میچ میں شرکت بھی مشکوک نظر آتی تھی لیکن گزشتہ روز انہوں نے ریٹائرمنٹ کا فیصلہ موخر کرتے ہوئے تیسرا ٹیسٹ کھیلنے کی تصدیق کی تھی۔

سابق کرکٹر حامد محمود کو تھپڑ مارنے کا معاملہ، باسط علی کو اپنے عہدوں سے ہاتھ دھونا پڑ گیا

انہوں نے سڈنی ٹیسٹ میچ میں ٹیم میں تبدیلیوں کا عندیہ دیتے ہوئے کہا کہ کنڈیشنز کو دیکھ کر ٹیم میں تبدیلیاں کی جائیں گی، روایتی طور پر سڈنی کی وکٹ آسٹریلیا کی دیگر وکٹوں سے مختلف ہوتی ہے لیکن ٹیم میں تبدیلیوں کا انحصار وکٹ دیکھ کر کیا جائے گا۔

مزید : کھیل