پاکستان اور بھارت کے درمیان نیو کلیئر تنصیبات کی فہرستوں کا تبادلہ ہوگیا

پاکستان اور بھارت کے درمیان نیو کلیئر تنصیبات کی فہرستوں کا تبادلہ ہوگیا
پاکستان اور بھارت کے درمیان نیو کلیئر تنصیبات کی فہرستوں کا تبادلہ ہوگیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان اور بھارت کے درمیان نیو کلیئر تنصیبات کی فہرستوں کا تبادلہ ہوگیا ۔نیو کلیئر تنصیبات کی فہرست کا یہ تبادلہ دونوں ملکوں کے درمیان ہونے والے ایک باہمی معاہدے کے تحت کیا گیا ہے تاکہ ایک دوسرے کی ایٹمی سہولیات پر حملہ نہ کیا جا سکے ۔

بھارتی خفیہ ایجنسیوں کی پاکستانی موبائل فون ہیک کرنے کی کوشش، ٹیلی کام سکیورٹی بورڈ نے الرٹ جاری کر دیا

میڈ یا رپورٹس کے مطابق نیو کلیئر تنصیبات کی ان فہرستوں کا تبادلہ اسلام آباد اور نئی دہلی میں موجود سفارتی چینلز کے ذریعے ہوا ہے ۔واضح رہے کہ دونوں ممالک کے درمیان ایٹمی تنصیبات کو نشانہ نہ بنانے کا معاہدہ 31دسمبر 1988میں ہوا تھا جس پر 27جنوری 1991پر عملدر آمد شروع ہوا،اس معاہدے کے تحت دونوں ملک جنوری کے پہلے روز ایک دوسرے کو اپنے ایٹمی تنصیبات کے بارے میں آگاہ کریں گے۔معاہدے کے تحت دونوں ملک ایک دوسرے کے قیدیوں کی فہرست بھی فراہم کرتے ہیں ۔

مزید : قومی /اہم خبریں