وقار ذکاءشام کے شہر حلب پہنچ گئے ، ویڈیو جاری

وقار ذکاءشام کے شہر حلب پہنچ گئے ، ویڈیو جاری
وقار ذکاءشام کے شہر حلب پہنچ گئے ، ویڈیو جاری

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

دمشق(ڈیلی پاکستان آن لائن)نئے سال کے اوائل میں سوشل میڈیا سٹار وقار ذکاءجنگ زدہ شام کے شہر حلب پہنچ گئے اورشہر کے حالات کے بارے میں مبینہ طورپرہونیوالا پراپیگنڈا بے نقاب کردیا۔

پاکستانی فنکار اور انسانی حقوق کے لیے سرگرم وقار ذکاءپاکستان سے حلب پہنچ گئے تاکہ بے یارومدد گار لوگوں کیساتھ نئے سال کی خوشیاں مناسکیں ۔حلب پہنچنے کے بعد وقار ذکاءنے ایک ایسی ویڈیو جاری کردی جس نے عالمی نیوز ایجنسیوں کی رپورٹس پر سوالیہ نشان لگادیا۔ یوٹیوب پر پوسٹ کی گئی وقار ذکاءکی ویڈیو میں وقار ذکاءنے دعویٰ کیاکہ حقائق کے برعکس سب کچھ دکھایاگیا، وہ شام میں میڈیا کے جھوٹے پراپیگنڈے کو بے نقاب کریں گے ۔

وقار ذکاءنے دکھایاکہ وہاں فائرنگبھی ہورہی تھی اور روسی ٹینکس بھی دیکھے جاسکتے ہیں لیکن فورس یا گری ہوئی عمارتوں کاکوئی ملبہ موجود نہیں ، سڑکیں سنسان ہیں اور دعویٰ کیاکہ حلب سے سامنے آنیوالی خبریں حقائق کے برعکس اور وسیع پراپیگنڈے کا حصہ ہے ۔

پاکستانی لڑکی نے فیس بک پر شرمناک اشتہاردیدیا، تہلکہ برپاہوگیا,تفصیلات کیلئے یہاں کلک کریں۔

یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ حلب ایک وسیع وعریض علاقہ ہے اور یہ بھی ممکنہ ہے کہ وقار ذکاءنے جنگ زدہ علاقوں کا دورہ نہ کیا ہوجس کا اعتراف خود وقار ذکاءنے بھی کیا اور بتایاکہ ہر طرف گڑبڑنہیں ہے ، کچھ ایسے علاقے ہوسکتے ہیں جہاں مسائل ہوں، البتہ لوگوں کو زندگی دوبارہ شروع کرنے میں مشکلات کا سامنا ہے،یہ بھی ہوسکتاہے کہ جنگ بندی کے معاہدے کی وجہ سے طوفان تھم چکاہو لیکن پاکستان کی طرف سے وقار ذکاءکے اس بہادرانہ اقدام کو شہریوں کی طرف سے سراہاجارہاہے۔

ویڈیومیں وقارذکاءکو حلب سے نقل مقامی کرنیوالے خاندانوں میں نقدی تقسیم کرتے دیکھاجاسکتاہے جبکہ آنکھ کے آپریشن کیلئے ایک لڑکی کو 900ڈالر دیئے ، حیران کن بات یہ تھی کہ مدد قبول کرنیوالی فیملیز سے پاکستان اور پاکستانیوں کیلئے بار بار دعائیں کروائی جاتی رہیں۔حلب سے بے گھر ہونیوالے ایک ڈاکٹر نے بتایاکہ وہ بے گھر ہوگئے ہیں ، انہیں نوکری سمیت ہر چیز کی ضرورت ہے ۔

وقار ذکاءکا کہناتھاکہ حلب کے مسائل بھی اسی طرح ہیں جیسے پاکستان کے ، مثال کے طورپر غربت۔وقار ذکاءنے پاکستانیوں کو مزید امداد نہ بھیجنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہایہاں کے لوگوں کو خوراک وغیرہ کیلئے مالی مدد کی ضرورت نہیں ،ان کی ضروریات عمومی ہیں جیسے کہ غریب پاکستانیوں کو ضرورت ہوتی ہے ، ممکن ہے کہ عالمی میڈیا اپنی ریٹنگ کیلئے شام کا معاملہ اچھال رہاہو۔

مزید : ڈیلی بائیٹس