یہودیوں کے خلاف تاریخی اقدام، مسلح مارچ کا اعلان ہوگیا، یہ مارچ کون لوگ کررہے ہیں؟ مسلمان نہیں بلکہ۔۔۔ ایسی خبر آگئی کہ امریکہ اور اسرائیل نے کبھی تصور بھی نہ کیاہوگا

یہودیوں کے خلاف تاریخی اقدام، مسلح مارچ کا اعلان ہوگیا، یہ مارچ کون لوگ ...
یہودیوں کے خلاف تاریخی اقدام، مسلح مارچ کا اعلان ہوگیا، یہ مارچ کون لوگ کررہے ہیں؟ مسلمان نہیں بلکہ۔۔۔ ایسی خبر آگئی کہ امریکہ اور اسرائیل نے کبھی تصور بھی نہ کیاہوگا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) ماضی کے جرمنی کی طرح اب امریکہ میں بھی ایک ’نازی گروپ ‘ وجود میں آ گیا ہے جس نے یہودیوں کے خلاف آواز اٹھانی شروع کر دی ہے۔ یہ گروپ مسلمانوں کا نہیں بلکہ امریکی گوروں پر مبنی ہے جو اپنے علاقے سے یہودیوں کو نکالنا چاہتے ہیں۔ اس گروپ نے جنوری کے دوسرے ہفتے میں امریکی ریاست مونٹانا کے شہر وائٹ فش میں یہودیوں کے خلاف ایک مسلح مارچ کرنے کا اعلان کر رکھا ہے، جہاں یہودی بہت زیادہ تعداد میں آباد ہیں۔ برطانوی اخبار دی انڈیپنڈنٹ کی رپورٹ کے مطابق اس گروپ نے اپنی ویب سائٹ پر جاری بیان میں کہا ہے کہ یہ مسلح مارچ ہر صورت ہو کر رہے گا۔

جرمنی میں ٹرک حملے کے بعد جس پاکستانی کو پولیس نے غلطی سے پکڑلیا وہ دراصل کون ہے اور پاکستان سے کیوں فرار ہوا؟ ایسا تہلکہ خیز انکشاف منظر عام پر آگیا کہ پاکستانی حیران پریشان رہ گئے

دوسری طرف وائٹ فش کے نفرت پسندی کے خلاف کام کرنے والے گروپوں نے بھی 7جنوری کو ’تنوع کا دن‘ منانے کا اعلان کر دیا ہے جس میں کنسرٹس و دیگر تفریح طبع کی تقریبات منعقد کی جائیں گی۔ ان گروپوں نے ان تقریبات کے لیے وائٹ فش کی انتظامیہ سے اجازت نامے بھی حاصل کر لیے ہیں۔ دوسری طرف یہودی مخالف مسلح مارچ کے منتظم اینڈریو انگلین کا کہنا ہے کہ ”ہم انتظامیہ سے اجازت نامے کے لیے درخواست نہیں دیں گے اور میں خود اس مارچ میں شرکت کروں گا۔ میرے وکلاءنے مجھے بتایا ہے کہ ریاست کے قوانین ہمیں اس کی اجازت دیتے ہیں اور ہم رائفلیں اٹھا کر شہر کے مرکز سے گزر سکتے ہیں۔“رپورٹ کے مطابق دونوں طرف کے گروپوں کے متحرک ہوجانے پر کسی بڑے تصادم کا خطرہ بڑھ گیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی