کرپشن الزامات، عرب ملک کے ڈپٹی چیف جسٹس نے اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا

کرپشن الزامات، عرب ملک کے ڈپٹی چیف جسٹس نے اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا
کرپشن الزامات، عرب ملک کے ڈپٹی چیف جسٹس نے اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا

  

قاہرہ(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان سمیت دنیا بھر میں کسی نہ کسی صورت میں کرپشن کے الزامات سامنے آتے رہتے ہیں لیکن مصرمیں کرپشن کے الزامات میں پکڑے گئے جج نے خود کشی کرکے اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔

ملزم جج کے وکیل نے بتایاکہ کرپشن کے الزامات کے تحت گرفتار کیے گئے مصرکے ڈپٹی چیف جسٹس وائیل شلابے ہفتہ کو اپنی گرفتاری سے چند لمحے پہلے استعفیٰ دیدیا تھا اور اتوار کو اُن پر رشوت لینے کا الزام لگادیاگیا، پیر کو سکارف استعمال کرتے ہوئے میرے موکل نے اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔ وکیل سید بہیرے نے بتایاکہ پوچھ گچھ کی وجہ سے وہ شدید نفسیاتی دباﺅ کا شکار تھے ، یہ بڑی بات ہے کہ آپ بہت اہم جج ہوں اور پھر اچانک ہر چیز سے ہاتھ دھوبیٹھیں اور پھر تفتیشی اہلکاروں کے سامنے رشوت لینے کے ملزم کے طورپر بیٹھے ہوں ‘۔

سعودی عرب میں سینکڑوں پاکستانی پھنس گئے کیونکہ ۔ ۔ ۔ تفصیلات کیلئے یہاں کلک کریں۔

سرکاری خبررساں ایجنسی نے بھی تصدیق کرتے ہوئے بتایاکہ شلابے نے خود کو موت کے گھاٹ اتاردیا جس کے بعد پبلک پراسیکیوٹر نے پوسٹمارٹم کا حکم دیدیا۔بتایاگیاہے کہ شلابے ملک کی ایڈمنسٹریٹوعدالتوں کی کونسل کے سیکریٹری جنرل بھی تھے اور ان کی گرفتاری کونسل کے پرچیزنگ منیجر جمال الدین اللبان کی گرفتاری کے چند دن بعد عمل میں آئی ، جمال الدین پر بھی کرپشن کے الزامات ہیں۔

کونسل آف سٹیٹ نے اپنے ایک بیان میں بتایاکہ شلابے کا استعفیٰ قبول کرلیاگیا ہے ۔

مزید : عرب دنیا