ہائی کورٹ :اراضی سکینڈل کی تہہ تک پہنچیں گے ،چیف جسٹس نے حکومت سمیت تمام متعلقہ محکموں سے جواب طلب کرلیا

ہائی کورٹ :اراضی سکینڈل کی تہہ تک پہنچیں گے ،چیف جسٹس نے حکومت سمیت تمام ...
ہائی کورٹ :اراضی سکینڈل کی تہہ تک پہنچیں گے ،چیف جسٹس نے حکومت سمیت تمام متعلقہ محکموں سے جواب طلب کرلیا

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے ایک لاکھ 93ہزار کنال اراضی ہتھیانے کے لئے جعلی عدالتی فیصلے تیار کرنے کے سکینڈل کے از خود نوٹس کیس میں پنجاب حکومت سمیت متعلقہ محکموں کے سربراہان سے جواب طلب کرتے ہوئے مزیدسماعت13جنوری تک ملتو ی کر دی ہے۔عدالت نے آئندہ تاریخ سماعت پر ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو آئندہ تاریخ سماعت پر مکمل تیاری کر کے پیش ہونے کی ہدایت کرتے ہوئے قرار دیا کہ حیران کن امر یہ ہے کہ عدالتوں کے جعلی فیصلے بنائے جا رہے ہیں،اراضی سکینڈل کے معاملے کی تہہ تک جائیں گے۔چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے اراضی سکینڈل سے متعلق میڈیا پرآنے والی خبروں پر معاملے کا نوٹس لیا تھاجبکہ سیشن جج لاہور کی طرف سے معاملے کی انکوائری رپورٹ ہائیکورٹ کو بھجوائی گئی تھی۔دوران سماعت عدالت نے سرکاری وکلاءکو روسٹرم پر طلب کرتے ہوئے قرار دیا کہ میڈیا پر مذکورہ اراضی سکینڈل بے نقاب کیا گیا تو معاملے کی انکوائری کروائی گئی جس کے بعد خوفناک حقائق سامنے آئے ہیں۔حیران کن امر یہ ہے کہ عدالتوں کے جعلی عدالتی فیصلے بنائے جارہے ہیں۔اراضی سکینڈل کے معاملے کی تہہ تک جائیں گے۔فاضل عدالت نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو آئندہ سماعت پر مکمل تیاری کے ساتھ پیش ہونے کا حکم دیا۔علاوہ ازیں چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے سینئرایڈووکیٹ سپریم کورٹ جاوید رشید محبوبی کو عدالتی معاون مقرر کردیااور حکم دیا کہ عدالتی معاون آئندہ سماعت پر اپنی تجاویز پیش کریںجبکہ تمام متعلقہ محکموں کے سربراہان کو نوٹس جاری کرتے ہوئے مزید سماعت13جنوری تک ملتو ی کر دی۔

مزید : لاہور