25 دسمبر کو پیدا ہونے والے بچے کا مسلمان ماں باپ نے ایسا نام رکھ دیا کہ مسلم دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا کیونکہ۔۔۔

25 دسمبر کو پیدا ہونے والے بچے کا مسلمان ماں باپ نے ایسا نام رکھ دیا کہ مسلم ...
25 دسمبر کو پیدا ہونے والے بچے کا مسلمان ماں باپ نے ایسا نام رکھ دیا کہ مسلم دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا کیونکہ۔۔۔

  

جکارتہ (مانیٹرنگ ڈیسک) ہر مذہب کے ماننے والے اپنے بچوں کے نام اپنی تاریخ اور روایات کے مطابق رکھتے ہیں مگر انڈونیشیا میں ایک مسلمان شخص نے اپنے بچے کا نام عیسائیوں کے مقدس تہوار کے نام پر رکھ دیا، جسے خود عیسائی بھی بچوں کے نام کے طور پر پسند نہیں کرتے۔

نجومیوں نے 2017 ء کو دنیا کیلئے خطرناک سال قرار دیدیا

ویب سائٹ WWWNکی رپورٹ کے مطابق مشرقی جاوا کے جزیرے پر ایک مسلمان شخص کے بچے کی ولادت کرسمس والے دن ہوئی۔ اتفاق سے بچے کی دایہ ایک عیسائی خاتون تھی، جس نے تجویز دی کہ عیسائیت کے مقدس تہوار کی مناسبت سے بچے کا نام ”میری کرسمس“ رکھ دیا جائے۔ عیسائی دایہ کی احمقانہ تجویز تو اپنی جگہ، لیکن بچے کے والد کا کارنامہ دیکھئے کہ اس نے یہ تجویز فوراً مان لی اور اپنے مسلمان بچے کا نام ”میری کرسمس“ رکھ دیا۔ مسلمان ہونے کے باوجود بچے کا ایسا نام رکھنے پر اس شخص پر شدید تنقید کی گئی۔ لیکن جو شخص اپنے بچے کا ایسا نام رکھ سکتا ہے اس سے یہ توقع کیسے کی جا سکتی ہے کہ وہ تنقید ہونے پر عقل سے کام لینے کا فیصلہ کر لے گا، لہٰذا اس نے بچے کے نام پر نظر ثانی کرنے کی بالکل کوئی ضرورت محسوس نہیں کی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس