لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ طارق خان کا جاوید ہاشمی پر فوج کو بدنام کرنے کا الزام لگاتے ہوئے حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ

لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ طارق خان کا جاوید ہاشمی پر فوج کو بدنام کرنے کا الزام ...
لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ طارق خان کا جاوید ہاشمی پر فوج کو بدنام کرنے کا الزام لگاتے ہوئے حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ طارق خان نے جاوید ہاشمی پر فوج کو بدنام کرنے کا الزام لگاتے ہوئے حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کر دیا ہے۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق سابق کور کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل (ر) طارق خان نے جاوید ہاشمی کے الزامات پر اپنا ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ فوج نے دھرنے کے دوران کوئی منفی کردار ادا نہیں کیا، وہ نہ کسی سیاستدان کو جانتے ہیں اور نہ کسی سے سیاست پر بات ہوئی۔ جاوید ہاشمی پہلے بھی فوج کو بدنام کرنے کی کوشش کر چکے ہیں،انہوں نے جاوید ہاشمی پر فوج کو بد نام کرنے کا الزام لگاتے ہوئے حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیاہے۔دوسری طرف سابق چیف جسٹس ناصر الملک نے جاوید ہاشمی کے بیان پر رائے دینے سے انکار کر دیا ہے۔

لیفٹیننٹ جنرل(ر)طارق خان نے کہا ہے کہ کبھی عمران خان سے نہیں ملا ہوں،میں سینئر کورکمانڈر تھا اب ریٹائرمنٹ کے بعد ڈیرہ اسماعیل خان میں زندگی گزار رہا ہوں،جاوید ہاشمی سینئر سیاستدان ہیں لیکن ان کے الزامات بچگانہ ہیں،جنرل راحیل کے دور میں جمہوریت کو سپورٹ کیا گیا ،میں مجبور ہوکر ٹی وی پر ہوں ورنہ مجھے کوئی شوق نہیں ہے،5جنرل میرے کورس میٹ تھے،ریٹائرمنٹ کے وقت خوشی کا ماحول ہوتا ہے-

انہوں نے کہا ہے کہ عمران خان نے خود دھرنا ختم کردیا تھا،جاوید ہاشمی کے الزامات کی تحقیقات ہونی چاہئیں،جاوید ہاشمی کے الزامات بے بنیاد ہیں،کبھی کسی سیاستدان سے نہیں ملا ہوں اور نہ ہی کبھی سیاست کی ہے،کمزور حکومت پر کوئی نہ کوئی الزام لگادیا جاتا ہے،تحقیقاتی کمیشن بنانا ہی ہے تو اس کا کوئی نتیجہ بھی آنا چاہیے۔

مزید : لاہور