خیبر، سیکورٹی فورسزکی جانب سے 6قیدی جرگہ کے حوالے

خیبر، سیکورٹی فورسزکی جانب سے 6قیدی جرگہ کے حوالے

  



ضلع خیبر (بیورورپورٹ) سیکورٹی فورسز نے پسد خیل کے 6 قیدی جرگہ کے حوالے کر دئے، جرگہ ممبران میں ملک دریاضان آفریدی، ملکزادہ ندیم آفریدی، و دیگر افراد شامل تھے، اس موقع پر پسد خیل کے خاطر شینواری کے والد گل جان بھی موجود تھے، ملک دریا خان آفریدی نے کہا کہ گزشتہ دنوں آئی ڈی بلاسٹ دھماکے میں جاں بحق ایف سی اہلکار اور خاطر شینواری کے قتل میں ملوث اہلکاروں کو قانون کے مطابق سزا دی جائے، ڈسی خیبر محمود اسلم وزیر کا کہنا تھا کہ اس واقعے پر پوری قوم کو دکھ ہیں اور شہید خاندان کے ساتھ ان کی ہمدردیاں ہیں ان کا کہنا تھا کہ خاطر شہید کے دو یتیم بچوں تعلیمی اور دیگر ضروریات پوری کی جائے گی اسکے علاوہ ان کے بڑے بھائی کو ایف سی میں نوکری دی جائے گی جرگہ ممبران نے کہا کہ باقی دو قیدیوں کو انکوائری کے بعد حوالے کئے جاءئنگے واضح رہے کہ گزشتہ ماہ سیکورٹی فورسز پر بم حملے میں ایک اہلکار کی موت واقع ہوئی تھی جس پر ایف سی اہلکاروں نے علاقہ پسد خیل کے 20 افراد کو گرفتار کیا تھا جن مین ایک خاطر شینواری دوران تفتیش تشدد سے جان کی بازی ہار گئے تھے جس پر پورے لنڈی کوتل میں احتجاجی مظاہرے شروع ہوئے تھے جبکہ خیبر سیاسی اتحٓد نے نا ختم ہونے والے دھرنے کی بھی کال دی تھی جو سات دنوں سے لنڈی کوتل بازار میں جاری ہے ادھر ایف سی اہلکاروں نے مقامی جرگے کو 6 قیدی حوالے کئے، خاطر شینواری کے باپ کا کہنا تھا کہ انہیں دونوں افراد کی موت پر دکھ ہیں اور ان کے موت میں ملوث اہلکاروں کے خلاف قانونی کاروائی کرنے کیلئے منتظر ہیں

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...