ڈسٹرکٹ بار الیکشن‘ کاغذات نامزدگی جمع‘ 16نشستوں پر 29امیدواروں میں مقابلہ

ڈسٹرکٹ بار الیکشن‘ کاغذات نامزدگی جمع‘ 16نشستوں پر 29امیدواروں میں مقابلہ

  



ملتان (وقائع نگار) ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن ملتان کے 11 جنوری کو ہونے والے سالانہ انتخابات کے لئے 16 نشستوں پر 29 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے ہیں۔صدارت کی نشست پر چھ امیدوار مدمقابل ہیں جن کی تعداد گزشتہ سالوں کی نسبت سب سے زیادہ ہے نائب صدر کی نشست پر تین امیدوار جبکہ جنرل سیکرٹری کی نشست پر ون ٹو ون مقابلہ ہوگا۔ جوائنٹ سیکرٹری کی نشست پر(بقیہ نمبر10صفحہ12پر)

ایک خاتون امیدوار نے، فنانس سیکرٹری اور لائبریری سیکرٹری کی نشست پر تین تین امیدوار مد مقابل ہیں جبکہ مجلس عاملہ کی 10 نشستوں پر 11 امیدواروں نے کاغذات جمع کرائیں ہیں۔ڈسٹرکٹ بار میں ہونے والے سالانہ انتخابات میں صدرات کی نشست کے امیدواروں میں عمران رشید سلہری، اصغر خان لودھی، سید یوسف اکبر نقوی، نشید عارف گوندل، محبوب علی سندیلہ اور اقبال مہدی زیدی شامل ہیں۔جنرل سیکریٹری کے امیدواروں میں غلام نبی طاہر اور محمد وسیم خان شامل ہیں۔نائب صدر کے امیدواروں میں الطاف راں، محمد راشد مصطفی شیخ، محمد امجد خان ہیں، فنانس سیکرٹری کے لئے رائے شاہد جاٹ، شیخ شعیب امجد، ملک محمد عرفان میتلا مقابلے کی دوڑ میں شامل ہیں،لائبریری سیکرٹری کی نشست کے امیدواروں میں دو خواتین شبانہ خان اور رابیلہ گیلانی کے ساتھ حسن محمود خان شامل ہیں۔جبکہ جوائنٹ سیکرٹری کے لئے آسیہ گل ہی سامنے آئی ہیں۔جبکہ مجلس عاملہ کی 10 نشستوں پر جاوید اقبال، ولایت علی خان، محمد ذولفقار علی، طاہر ریاض قریشی، محمد طیب ہاشمی، محمد فیاض، ظہور احمد چوہدری، ارسلان منیر، حافظ عبدالرؤف قادری، تصور عباس صدیقی اور سید محسن رضا گردیزی کے نام شامل ہیں۔ ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کے انتخابات کے لئے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی پر جانچ پڑتال آج ہو گی۔ اس سلسلے میں الیکشن بورڈ کی جانب سے امیدواروں کے جمع کرائے گئے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال آج صبح 10بجے سے 12 بجے دن تک کی جائے گی۔ چیئرمین الیکشن بورڈ ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کنور محمد یونس کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق سالانہ انتخابات 2020 میں ووٹ کاسٹ کرنے کے لیے وکلاء کو اپنا اصل قومی شناختی کارڈ اور پنجاب بار کونسل کا جاری کردہ اصلی لائسنس کارڈ ساتھ لانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ اور یہ بات بھی واضح کی گئی ہے کہ ان مذکورہ کارڈ کے بغیرت وکلاء کو ووٹ ڈالنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ ڈسٹرکٹ بارایسوسی ایشن ملتان کو الیکشن اخراجات کے لئے امیدواروں کی جانب سے 4 لاکھ 15 ہزار روپے کی آمدن ہوئی ہے۔ اس سلسلے میں الیکشن بورڈ کی جانب سے امیدواروں کو الیکشن اخراجات کے لئے زرِضمانت جمع کرانے کی ہدایت کی گئی تھی جو صرف کاغذات واپس لینے کی صورت میں واپس کی جائے گی۔ اس ضمن میں گزشتہ روز صدارت کے عہدے پر 6 امیدواروں کی جانب سے 30 ہزار روپے فی کس کے مطابق ایک لاکھ 80 ہزار روپے، نائب صدر کے لئے 3 امیدواروں کی جانب سے 20 ہزار روپے فی کس کے مطابق 60 ہزار روپے، جنرل سیکرٹری کے عہدے پر دو امیدواروں کی جانب سے 25 ہزار روپے فی کس کے مطابق 50 ہزار روپے، جوائنٹ سیکرٹری،لائبریری سیکرٹری اور فنانس سیکرٹری کے عہدوں پر 10 ہزار روپے فی کس کے مطابق 70 ہزار روپے اور ممبر مجلس عاملہ کی نشست پر 5 ہزار روپے فی کس کے مطابق ایک 55 ہزار روپے جمع کرائے گئے ہیں۔ موسم سرما کی تعیطلات ختم ہونے پر آج سے ضلع کچہری میں سرگرمیاں بحال ہوں گی اور معمول کے مطابق فرائض انجام دیے جائیں گے، اور بڑی تعداد میں مقدمات سماعت کے لئے پیش کئے جائیں گئے۔دریں اثناء گزشتہ روز سے تعطیلات ختم ہونے پر تمام عدالتوں میں کام شروع ہوگا نیز عدالتی ملازمین کی جانب سے مقدمات کے التواء اور کارکردگی کے حوالے سے رپورٹس بنانے کا کام بھی کیا جائے گا۔ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن ملتان کے انتخابات میں امیدواروں نے الیکشن قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ضلع کچہری میں بڑے سائز کے پینا فلیکس اور پوسٹر لگا دئیے ہیں جس کے خلاف پنجاب بار کونسل کی ہدایت کے باوجود کوئی کارروائی نہیں کی جا سکی ہے۔ یاد رہے کہ الیکشن قوانین کے مطابق امیدوار صرف ہینڈ بل یا کارڈ کے ذریعے انتخابی مہم چلا سکتا ہے لیکن امیدواروں کی جانب سے ضلع کچہری کے اندر اور باہر بڑی تعداد میں پینا فلیکس اور پوسٹرز لگا دئیے گئے ہیں جس سے ضلع کچہری کے در و دیوار رنگین ہو گئے ہیں جس پر چئیر پرسن ایگزیکٹو کمیٹی پنجاب بار کونسل کی جانب سے بھی نوٹس لیتے ہوئے مذکورہ پینا فلیکس اور پوسٹرز اتارنے کی ہدایت کے ساتھ ذمہ دار امیدواروں کے خلاف کارروائی کرنے کی ہدایت بھی کی گئی تھی تاہم ملتان میں مذکورہ پینا فلیکس اور پوسٹرز ابھی تک نہیں اتارے جا سکے ہیں۔ اس سلسلے میں چئیرمین الیکشن بورڈ ڈسٹرکٹ بار ملتان کنور محمد یونس نے کہا ہے کہ بینرز ہٹانے کے لئے ہدایات جاری کر دی گئیں ہیں اور بینرز اتارنے کا سلسلہ جاری ہے جو جلد ہی ہٹا دئیے جائیں گے نیز خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی بھی ہوگی جس کے لئے شوکاز نوٹس جاری کیے جائیں گے جس کی کارروائی میں امیدواروں کو نااہلی کا سامنا بھی کرنا پڑ سکتا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر