مودی نے بھارتیوں کو انتہا پسندی کی سوچ دیکر خطے کا امن استحکام داؤ پر لگادیا: سردار مسعود

  مودی نے بھارتیوں کو انتہا پسندی کی سوچ دیکر خطے کا امن استحکام داؤ پر ...

  



کوئٹہ(این این آئی)آزاد جموں وکشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ نریندر مودی کی حکومت نے بھارت کے شہریوں کو انتہاء پسندی کی سوچ دے کر پورے خطہ کے امن و استحکام کو داؤ پر لگادیا ہے۔ ہندوتوا کا نظریہ نہ صرف پاکستان اور آزادکشمیر کے لئے بلکہ پورے ہندوستان کے مسلمانوں کے لئے ایک سنگین خطرہ ہے۔ یہ بات انہوں نے وزیر اعلیٰ بلوچستان میر جام کمال خان سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر صوبائی وزراء میر ظاہر  بلیدی، سردار عبدالرحمان کھیتراں، عبدالخالق ہزارہ، وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی میر اکبر عسکانی، پارلیمانی سیکرٹری میر سکندر عمانی اورقومی اسمبلی کے رکن سردار اسرار ترین بھی موجود تھے۔ صدر آزادکشمیر اور وزیر اعلیٰ بلوچستان نے مقبوضہ کشمیر کی تازہ ترین صورتحال اور وہاں انسانی حقوق کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا اور بھارتی حکومت کی امتیازی پالیسیوں اور شہریت قانون سمیت مقبوضہ جموں وکشمیر کے بارے میں دہلی کی حکومت کے اقدامات کی شدید مذمت کی۔ صدر سردار مسعود خان نے بلوچستان کے عوام کی طرف سے مقبوضہ جموں وکشمیر کے عوام کی جدوجہد آزادی کی حمایت اور یکجہتی کے اظہار کے لئے بلوچستان بھر میں جلسے، جلوس اور ریلیاں منعقد کرنے پر وزیر اعلیٰ کا شکریہ ادا کیا۔دونوں رہنماؤں نے ملاقات کے دوران اس بات پر زور دیا کہ تنازعہ کشمیر کے پرامن سیاسی و سفارتی حل کے لئے اقوام متحدہ سمیت دیگر بین الاقوامی اور کثیر القومی فورمز پر کوششیں جاری رہنی چاہیے۔ وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے صدر آزادکشمیر کو یقین دلایا کہ بلوچستان کے غیور اور محب وطن عوام کشمیریوں کے حق و انصاف پر مبنی جدوجہد کی حمایت جاری رکھیں گے کیونکہ وہ اس حمایت کو اپنی اخلاقی، قومی اور مذہبی ذمہ داری سمجھتے ہیں۔ صدر آزادکشمیر نے وزیر اعلیٰ بلوچستان کو اس مقصد کے لئے آزادکشمیر کا دورہ کرنے کی دعوت بھی دی۔ وزیر اعلیٰ بلوچستان نے صدر آزادکشمیر کی دعوت کو قبول کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی کابینہ کے اہم وزراء کے ہمراہ جلد آزادکشمیر کا دورہ کریں گے۔

سردار مسعود

مزید : صفحہ آخر