دعا ہے 2020ء کشمیری عوام کیلئے امید  امن کا سال ثابت ہو،مشعال ملک

  دعا ہے 2020ء کشمیری عوام کیلئے امید  امن کا سال ثابت ہو،مشعال ملک

  



اسلام آباد (این این آئی)مقبوضہ کشمیر میں غیر قانونی طورپر نظربند جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک نے سال 2019ء کو مقبوضہ کشمیر کے مظلوم عوام کے لیے مہلک ترین سال قراردیتے ہوئے دعا کی کہ 2020ء کشمیری عوام کے لیے امید، امن، عزت اوراحترام کا سال ثابت ہو۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق مشعال ملک نے سال 2020ء کی آمد پر اپنے ایک ٹویٹ پیغام میں سامعین اور دنیا بھر کو نئے سال کی مبارکباد دی اور امید ظاہر کی کہ 2020ء کا سال 2019ء کے متاثرین کے لیے آواز بلند کرنے کا سال ہوگاجو جموں وکشمیر کے عوام کے لیے ایک سیاہ ترین باب تھا۔ انہوں نے کہا 2019ء میں فسطائی اور انتہا پسند بھارتی حکومت نے دفعہ 370اور 35Aکو ختم کرکے جموں وکشمیرکے لوگوں کو جائیداد، زندہ رہنے، سانس لینے اور کھانے کے حقوق سمیت تمام حقوق سے محروم کردیا۔ انہوں نے کہاکہ ہم گزشتہ 149روز سے محاصرے میں ہیں۔یہ 19واں ہفتہ ہے اور نماز جمعہ ادا نہیں کی جاسکی، عیدمیلاد النبیﷺ یا محرم کے جلوس نکالنے سمیت مذہبی اجتماعات منعقد نہیں کئے جاسکے۔ تمام سکول اور کالجزخالی ہیں کیوں کہ لوگ نقل وحرکت نہیں کرسکتے۔ انہوں نے کہاکہ ہرطرف کرفیو ہے اور ان کے شوہر محمد یاسین ملک جو تحریک آزادی کے اعلیٰ رہنماہیں، تہاڑ جیل کی کال کوٹھری میں ہیں اور تمام دیگر رہنماؤں کو گرفتارکیا گیا ہے۔ مشعال ملک نے اپنے پیغام میں دنیا بھر کے لوگوں پر زوردیا کہ اگروہ مساوات اور باہمی عزت و احترام پر یقین رکھتے ہیں اور دنیا خاص کر جنوبی ایشیا میں جو جوہری جنگ کے دہانے پر ہے،امن چاہتے ہیں، تو وہ انسانیت اور مظلوم کشمیریوں کے لیے اپنی آواز بلند کریں۔

مشعال ملک

مزید : صفحہ آخر