حکومت کا سرکاری وکلاء کو 30فیصد اضافی الاؤنس ادا کرنیکا فیصلہ 

حکومت کا سرکاری وکلاء کو 30فیصد اضافی الاؤنس ادا کرنیکا فیصلہ 

  



لاہور(این این آئی)عدالتوں میں حکومت کی پیروی کرنے والے سرکاری دکلاء کو تنخواہ کے ساتھ  30فیصد اضافی الاؤنس ادا کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔محکمہ قانون وپارلیمانی امور کے مطابق صوبہ بھر میں کام کرنے والے سرکاری وکیلوں کو ادا کی جانے والی تنخواہ کے علاوہ 30فیصد اضافی الاؤنس کی تجویز پر مبنی سمری ارسال کر دی گئی ہے۔محکمہ خزانہ پنجاب نے محکمہ قانون وپارلیمانی امور پنجاب کی جانب سے بھجوائی گئی سمری پر اعتراضات عائد کئے تاہم حکومت نے محکمہ خزانہ پنجاب کے اعتراضات کو نظر انداز کرتے ہوئے سرکاری وکلاء کوالاؤنس دینے کی سمری منظور کر لی۔مذکورہ سمری اب حتمی منظوری کے لئے صوبائی کابینہ کو ارسال کی جائے گی۔ سرکاری وکلاء کو دئیے جانے والے الاؤنس کی مد میں صوبائی حکومت کو سالانہ 60لاکھ روپے سے زائد اخراجات برداشت کرنا پڑیں گے۔صوبائی کابینہ کی منظوری ملتے ہی محکمہ خزانہ پنجاب کی جانب سے نوٹیفیکیشن جاری کر دیا جائے گا۔

سرکاری وکلاء

مزید : صفحہ آخر


loading...