سرحد پار سرجیکل سٹرائیک کا حق رکھتے ہیں،بھارتی آرمی چیف

  سرحد پار سرجیکل سٹرائیک کا حق رکھتے ہیں،بھارتی آرمی چیف

  



نئی دہلی (این این آئی) بھارت کے نئے آرمی چیف جنرل منوج مکند نروانے نے کہا ہے کہ بھارت سرحد پار دہشت گردی کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانے کیلئے پیشگی سرجیکل سٹرائیک کرنے کا اپنا حق محفوظ رکھتا ہے۔بھارت کے 28ویں آرمی چیف کے طورپر عہدہ سنبھالنے کے بعدبھارتی میڈیا کو دئیے گئے اپنے پہلے انٹرویو میں جنرل نروانے نے کہاکہ دہشت گردی پوری دنیا کے لیے مسئلہ ہے، بھارت دہشت گردی کو جڑ سے ختم کرنے کے حق میں ہے۔ اب دہشت گردی سے متعدد ممالک متاثر ہو رہے ہیں، ایسے میں پوری دنیا دہشت گردی کے خطرات کو سمجھنے لگی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارت نے دہشت گردی کے خلاف سخت جوابی کارروائی کی پالیسی بنائی ہے۔بھارت کے نئے آرمی چیف جنرل نروانے کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر کو خصوصی حیثیت ختم کرکے ریاست میں سدھار ہوا ہے اس میں شک نہیں کہ پرتشدد واقعات میں کمی آئی ہے اور حالات میں سدھار ہوا ہے۔ مسائل ختم نہیں ہوئے۔ وہ ابھی باقی ہیں لیکن ہم اس سے نمٹنے کے لیے مسلسل سدھارکر رہے ہیں اور آنے والے چیلنجز کا بھی مقابلہ کریں گے۔چین کے ساتھ بھارت کی 3500 کلومیٹر طویل سرحد پر صورت حال کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں جنرل نروانے نے کہاکہ ووہان سمٹ کے دوران دونوں ملکوں نے اپنی افواج کو سٹرٹیجک گائیڈلائنز دی تھیں۔ اس کا مقصد سرحد پر امن قائم کرنا تھا۔ اس کے ذریعے ہم مسائل کو مقامی سطح پر حل کرنے اور ان کو تنازع بننے سے روکنا چاہتے ہیں۔ بعض امور پر اختلافات اور حساس مقامات پر ٹکراؤ کے باوجود دونوں افواج کے تعلقات دوستانہ ہیں۔

بھارتی آرمی چیف

مزید : صفحہ اول


loading...