پشاور بی آر ٹی منصوبے کی تحقیقات تیز، ایف آئی اے کا چمکنی بس ٹرمینل کا دورہ

پشاور بی آر ٹی منصوبے کی تحقیقات تیز، ایف آئی اے کا چمکنی بس ٹرمینل کا دورہ

  



پشاور(آئی این پی) ایف آئی اے کی جانب سے پشاور بی آر ٹی پروجیکٹ پر تحقیقات تیز کر دی گئی، پشاور ٹرانس پروجیکٹ کے سربراہ محمد فیاض سے تفصیلی تحقیقات کر دی گئی جبکہ ایف آئی اے کی تحقیقاتی ٹیم کا اچانک چمکنی بس ٹرمینل کا دورہ اور بسز کا معائنہ بھی کیا گیا۔بدھ کو فیڈرل انوسٹی گیشن کی تحقیقاتی ٹیم کی جانب سے پشاور بس رپیڈ ٹرانزٹ کے چمکنی ڈپو اسٹیشن کا دورہ کیا، تحقیقاتی ٹیم کی سربراہی ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے رضوان شاہ نے کی، ایف آئی اے حکام نے بتایا کہ پشاور ہائی کورٹ کے حکم پر بی آر ٹی کی تحقیقات تیزی سے جا رہی ہیں جبکہ ایف آئی اے حکام کے مطابق بی آر ٹی حکام سے بسوں کو منگوانے ٹینڈر اور کوالٹی سمیت کئی سوالات پر جواب طلب کیا گیا ہے، پشاور حکام کی جانب سے ایف آئی اے کی تحقیقاتی ٹیم کو پروجیکٹ کے حوالے سے تفصیلی بریفینگ دی گئی۔

جبکہ منگل کے روز ٹرانس پشاور محمد فیاض سے بھی اس حوالے سے پوچھ گچھ کی گئی،ایف آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ پشاور ہائی کورٹ نے سوالات اٹھائے تھے کہ منصوبہ کی تکمیل سے پہلے ٹرانس پشاور کی جانب سے بسز اور دیگر مشینری کیوں منگوائی تھی اور ان کی حفاظت کیلئے انہوں نے کیا اقدامات کئے ہیں،ایف آئی اے کی تحقیقاتی ٹیم نے چمکنی بس ٹرمینل میں کھڑی بسز اور مشینری کامعائنہ بھی کیا۔

، پشاور ہائی کورٹ کے حکم کے بعد بی آر ٹی پروجیکٹ پر تحقیقات مزید تیز کر دی گئی ہے اور اس حوالے سے رپورٹ کو جلد مکمل کر لیا جائے گاجو پشاور ہائی کورٹ میں پیش کیا جائے گا،ایف آئی اے حکام کے مطابق بی آر ٹی پروجیکٹ میں شامل تمام سرکاری افسران اور حکومتی افراد سے تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

پشاور بی آر ٹی

مزید : علاقائی