چینی صدر شی جن پھنگ کا نئے سال کی آمد پرتہنیتی پیغام

چینی صدر شی جن پھنگ کا نئے سال کی آمد پرتہنیتی پیغام

  



کراچی (انٹرنیٹ نیوز) چینی صدر شی جنگ پھنگ نے بیجنگ میں نئے سال کی آمد پر دوست ممالک کے سربراہان کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے۔ انٹرنیٹ پرجاری بیان میں انہوں نے مزید کہا کہ 2019 میں ہم نے محنت سے کامیابیاں حاصل کی ہیں اور ٹھوس اقدامات سے ترقی کے راستے پر گامزن ہیں۔ رواں برس چین کی اعلی معیار کی ترقی مستحکم طور پر جاری رہی، توقع ہے کہ جی ڈی پی کی مجموعی مالیت ایک ہزار کھرب چینی یوان تک پہنچ جائیگی یعنی فی کس جی ڈی پی کی شرح دس ہزار امریکی ڈالرز سے تجاوز کر جائیگی۔معاشی و معاشرتی ترقی کے حوالے سے 3 اہم منصوبوں کے نفاذ سے متعلق کلیدی پیش رفت ہوئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ نئے عہد کیلئے پیپلز آرمی نت نئی عسکری صلاحیتوں کا مظاہرہ کر رہی ہے۔ہم نے قومی دن کے موقع پر عظیم پریڈ کا انعقاد کیا، بحریہ اور فضائیہ کے قیام کی سترویں سالگرہ منائی گئی اور ساتویں عالمی فوجی گیمز کی میزبانی کی گئی۔چینی ساختہ طیارہ بردار بحری جہاز باضابطہ طور پر بحری فوج میں شامل کیا گیا۔ ہمارے فوجی دستے مادر وطن کا ہمیشہ تحفظ کرنے والی آہنی دیوار ہیں۔ اس موقع پر ہم آبائی گھر کے محافظوں کو سلام اور اْن کیلئے احترام کا اظہار کرتے ہیں۔میں رواں سال کے دوران بے شمار لوگوں اور واقعات سے بیحد متاثر ہوا ہوں۔ چانگ فو چھینگ، جنہوں نے ساری زندگی نمود و نمائش کو نظر انداز کرتے ہوئے صرف اپنے اصل ہدف اور مشن پر توجہ مرکوز کی۔ ہوانگ ون شو، جہنوں نے غربت کے خاتمے کیلئے اپنی ساری جوانی اور زندگی صرف کر دی۔ صوبہ سی چھوان کے مو لی علاقے کے آگ بجھانے والے 31 بہادر سپاہی، اپنی جان پر کھیل کر دوسرے سپاہیوں کا تحفظ کرنے والے دو فو گوہ، چینی خواتین کی والی بال ٹیم جس نے تسلسل سے عالمی کپ کے 11 مقابلوں میں فتح حاصل کی اور چیمپئن قرار پائی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس کے علاوہ دیگر خدمات سرانجام دینے والے بے شمار گمنام ہیروز نے اپنی عام روزمرہ زندگی کے دوران غیر معمولی باب رقم کئے۔سال 2019ء کے دوران چین سارے عالم کا کھلے بازوں سے خیر مقدم کرتا ہے۔ ہم نے دوسرا ایک پٹی ایک شاہراہ بین الاقوامی تعاون سربراہی فورم،بیجنگ کی عالمی باغبانی نمائش، ایشیائی تہذیب و تمدن کی مذاکراتی کانفرنس، چین کی دوسری بین الاقوامی درآمدی نمائش کا انعقاد کیا، جس سے پوری دنیا میں ایک مہذب، کھلے اور اشتراک کے خواہشمند چین کی عکاسی ہوئی۔ میں نے متعدد ممالک کے راہنماؤں اور سربراہان مملکت سے ملاقاتوں کے دوران چین کے نظریات کا تبادلہ کیا، جس سے باہمی دوستی کو فروغ اور اتفاق رائے کو وسعت حاصل ہوئی۔ دنیا میں چند مزید ممالک نے چین کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کئیمیں، جس سے چین کیساتھ سفارتی تعلقات قائم کرنے والے ممالک کی تعداد 180 تک جاپہنچی ہے۔ ہمارے دوست پوری دنیا میں موجود ہیں۔ سال 2020ء کو سنگ میل کی حیثیت حاصل ہے۔ہم خوشحال معاشرے کی مکمل تشکیل کریں گے اور پہلے صد سالہ اہداف حاصل کریں گے۔سال 2020ء میں غربت کا مکمل خاتمہ کیا جائے گا۔حتمی فتح کے لئے گھنٹی بج رہی ہے۔ہم مشکلات کے سامنے ایک ساتھ مل کر کھڑے رہیں گے اور پیچھے نہیں ہٹیں گے، اپنی خامیوں کو دور کرتے ہوئے بنیاد کو پختہ بنانے کی کوشش کریں گے اور غربت کے خاتمے کے آخری مرحلے کو عبور کریں گے۔ہم طے شدہ منصوبے کے مطابق موجودہ معیار کی روشنی میں دیہی علاقے میں غریب لوگوں اور غریب کاؤنٹیوں کو غربت سے نکالیں گے۔چند دن پہلے میں نے مکاؤ خصوصی انتظامی علاقے کی مادروطن میں واپسی کی بیسویں سالگرہ منانے کی تقریب میں شرکت کی۔میں مکاؤکی خوشحالی اور استحکام پر خوشی اور اطمینان محسوس کرتا ہوں۔مکاؤ کی کامیابی سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ "ایک ملک دو نظام" کا نظریہ عمل میں لایا جاسکتا ہے، یہ کامیاب ہوسکتا ہے اور عوام میں بھی انتہائی مقبول ہو سکتا ہے۔حالیہ چند ماہ سے ہانگ کانگ کی صورتحال باعث تشویش ہے۔ہم آہنگی اور استحکام کے بغیر خوشحال گھر کیسے ممکن ہو سکتا ہے۔میری دلی خواہش ہے کہ ہانگ کانگ میں بہتری آئے گی اور ہانگ کانگ کے ہم وطن خوشحال ہوں گے۔ہانگ کانگ کی خوشحالی اور استحکام ہانگ کانگ کے شہریوں کی مشترکہ خواہش اور چینی عوام کی امید بھی ہے۔آئیے، ہم سب ایک ساتھ مل کر سال 2020ء کا خیرمقدم کریں۔نیا سال مبارک۔

مزید : صفحہ اول


loading...