14 سالہ گھریلو ملازمہ ثنا کووحشیانہ تشددکیا گیا،ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں انکشاف

14 سالہ گھریلو ملازمہ ثنا کووحشیانہ تشددکیا گیا،ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں ...
14 سالہ گھریلو ملازمہ ثنا کووحشیانہ تشددکیا گیا،ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں انکشاف

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہور کے علاقے چوہنگ میں قتل ہونے والی 14 سالہ گھریلو ملازمہ ثنا کی ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ آگئی ، پوسٹ مارٹم رپورٹ میں گھریلو ملازمہ ثنا پر تشدد ثابت ہو گیا،ثنا کو ڈاکٹر عمیر ہ اور اس کے خاوند جنید نے تشدد کا نشانہ بنا کر قتل کیا تھا۔

واضح رہے کہ کچھ روز قبل لاہور کے علاقے چوہنگ میں 14 سالہ گھریلو ملازمہ ثناکی لاش گھر میں پائی گئی تھی،گھر کی مالکہ ڈاکٹر عمیرہ کاکہناتھا کہ ثنا سیڑھیوں سے گر کر زخمی ہوئی تھی اور اس کا گھر میں علاج جاری تھاجبکہ والدین کاکہناتھا کہ ان کی بیٹھی کی موت تشدد ہوئی،پولیس نے بچی کی لاش پوسٹ مارٹم کیلئے ہسپتال منتقل کردی تھی جس کی ابتدائی رپورٹ آگئی ہے ۔

میڈیا یرپورٹس کے مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر عمیرہ نے ثنا کے سیڑھیوں سے گرنے کا جھوٹ بولاتھا ،پوسٹ مارٹم رپورٹ میں کہاگیا ہے کہ ثنا کے جسم پر 5 مقامات پر تشدد کے نشانات موجود ہیں ،بچی کے جسم پر پرانے تشدد کے نشانات پائے گئے ہیں ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...