زیادہ تر پاکستانیوں کے کریڈٹ اور ڈیبٹ کارڈ چلنا بند ہوگئے

زیادہ تر پاکستانیوں کے کریڈٹ اور ڈیبٹ کارڈ چلنا بند ہوگئے
زیادہ تر پاکستانیوں کے کریڈٹ اور ڈیبٹ کارڈ چلنا بند ہوگئے

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) نئے سال کے آغاز پر ہی پاکستانی بینک صارفین کے لیے بری خبر آ گئی ہے کہ زیادہ تر لوگوں کے اے ٹی ایم، کریڈٹ اور ڈیبٹ کارڈ آج سے کام کرنا چھوڑ دیں گے۔ ویب سائٹ ’پرو پاکستانی‘ کے مطابق سٹیٹ بینک آف پاکستان کی طرف سے جاری ایک نوٹیفکیشن میں بتایا گیا ہے کہ ”مقناطیسی پٹیوں (Magnetic Strips)کے حامل اے ٹی ایم، کریڈٹ اور ڈیبٹ کار آج سے بند ہو جائیں گے۔“ سٹیٹ بینک کی طرف سے تمام بینکوں کو ہدایت کی گئی تھی کہ وہ نئے سال کے آغاز سے قبل ہی اپنے تمام کارڈز کو ’یورو پے ماسٹرکارڈ ویزا کمپلائنٹ کارڈز پر منتقل کر لیں یا پھر ’چپ‘ (Chip)والے کارڈز کا اجراءکریں۔

چنانچہ آج سے تمام بینکوں کے پرانے مقناطیسی پٹیوں والے کارڈز بند کیے جا رہے ہیں اور جن لوگوں کے پاس اب تک وہی پرانے کارڈز ہیں وہ آج کے بعد کام نہیں کریں گے۔ رپورٹ کے مطابق نئے کارڈز کے حصول کے لیے بینکوں میں لوگوں کا رش دیکھا جا رہا ہے اور محدود وقت میں کارڈ حاصل کرنا اور اسے ایکٹیویٹ کرنا صارفین کے لیے دشوار ثابت ہو رہا ہے۔ تاہم اس میں سٹیٹ بینک کی کوئی غلطی نہیں ہے۔ اس کی طرف سے پہلی بار نومبر 2018ءمیں یہ سرکلر جاری کیا گیا تھا اور بینکوں کو 30جون 2019ءتک نئے کارڈز جاری کرنے کی ہدایت کی گئی تھی لیکن بینکوں نے اس ہدایت پر عمل نہیں کیا۔ اس پر سٹیٹ بینک نے ڈیڈلائن بڑھا کر 31دسمبر 2019ءکر دی تھی جو دو روز قبل ختم ہو گئی ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...