آرمی ایکٹ میں ترمیم کا معاملہ، نواز شریف سے بات کی گئی تو انہوں نے کیا کہا؟ خواجہ آصف کا حیران کن انکشاف

آرمی ایکٹ میں ترمیم کا معاملہ، نواز شریف سے بات کی گئی تو انہوں نے کیا کہا؟ ...
آرمی ایکٹ میں ترمیم کا معاملہ، نواز شریف سے بات کی گئی تو انہوں نے کیا کہا؟ خواجہ آصف کا حیران کن انکشاف

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ نواز شریف نے ہدایت کی تھی کہ آرمی ایکٹ میں ترمیم کا معاملہ آئے تو اس کی مخالفت نہ کی جائے بلکہ حمایت کی جائے، اس فیصلے پر تنقید بھی ہو رہی ہے لیکن مشکل حالات آتے ہیں اور ان کا سامنا کرنا چاہیے، وقت پارٹی قیادت کے فیصلے کا جواز درست ثابت کرے گا۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے رہنما مسلم لیگ ن خواجہ آصف نے کہا کہ پارٹی کے چند لوگ میٹنگ کیلئے لندن گئے تھے، وہاں نواز شریف نے کہا تھا کہ آرمی ایکٹ میں ترمیم کا قانون آئے تو توثیق کریں،مخالفت نہ کی جائے ، ہم قانون کے خدوخال درست کرنے جارہے ہیں ، روایات اور زبانی معاملات کو اب تحریری شکل دینے جارہے ہیں، آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کی صوابدید آج بھی وزیر اعظم پر ہے۔

انہوںنے کہا کہ پارٹی اجلاس بلا کر نواز شریف کی ہدایت کا کہہ دیا تھا ، پارٹی اجلاس میں اختلاف رائے کا بھی اظہار کیا گیا لیکن پارٹی قیادت کے فیصلے کی پاسداری کی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ آرمی ایکٹ کی ترمیم کی غیر مشروط حمایت پر ہم پر تنقیدبھی کی جارہی ہے بلکہ گالیاں بھی دی جارہی ہیں۔ پارٹی کے اندر یا پارٹی کے باہر نقطہ چینی کرنیوالوں کو جواب میں کہتا ہوں کہ سیاسی پارٹیوں پر ایسے مشکل حالات آتے ہیں ،ان کا سامنا کرنا چاہئے۔

خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ اس فیصلے پر اب اور آنے والے دنوں میں ہم پر تنقید ہوگی بلکہ الیکشن میں اس ایشو کا سامنا کرنا پڑے گا لیکن ہمیں تنقید کو خندہ پیشانی سے برداشت کرناچاہئے۔نواز شریف کے ماضی میں فیصلوں پر بھی منفی اثر آیا لیکن وقت پارٹی قیادت کے فیصلے کا جواز درست ثابت کرے گا ۔

ن لیگ کی جانب سے نظریے پر سمجھوتہ کرنے سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ یہ بات درست ہے ، میں چاہتا ہوں کہ میں اپنی نظریاتی اساس سے جداہوکر دنیا سے رخصت نہ ہوں۔

مزید : Breaking News /قومی /اہم خبریں