القدس کے اسلامی آثار قدیمہ بارے روسی صدر کے بیان پر فلسطین کا احتجاج

القدس کے اسلامی آثار قدیمہ بارے روسی صدر کے بیان پر فلسطین کا احتجاج

 غزہ ( اے این این )فلسطینی وزارت خارجہ نے روسی صدر ولادی میر پوٹین کے دورہ بیت المقدس کے دوران دیوار براق کے بارے میں متنازعہ بیان پر شدید احتجاج کیا ہے۔ وزارت خارجہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں روسی صدر پر زور دیا گیا ہے کہ وہ بیت المقدس کی اسلامی تاریخ کو مسخ کرنے اور صہیونیت نواز موقف اختیار کرنے سے باز رہیں۔خیال رہے کہ روسی صدر نے حال ہی میں اپنے دورہ بیت المقدس کے دوران ایک نیوز کانفرنس سے خطاب میں کہا تھا کہ مسجد اقصی کے ساتھ منسلک دیوار براق کی بنیادوں میں یہودی تہذیب اور تاریخ کے آثار مخفی ہیں۔مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق وزارت خارجہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ روسی صدر نے بیت المقدس اور مسجد اقصی کے بارے میں ایک متنازعہ اور خلاف حقیقت بیان جاری کرکے علاقے میں اسرائیل کے غلط موقف کی حمایت کی ہے۔ روسی صدر نے جس دیوار براق کی بنیادوں میں یہودی تاریخ کے آثار کی موجودگی کا دعوی کیا ہے اس کے بارے میں سنہ 1930 میں قائم شو کمیٹی نے واضح کردیا تھاکہ دیوار براق میں یہودیوں کا کوئی حق نہیں۔ پوری عالمی برادری نے کمیٹی کی تحقیق کو تسلیم کیا تھا۔ جس میں سابق سوویت یونین بھی شامل تھی لیکن آج روسی صدر ولادی میر پوتین کو بیت المقدس اور مسجد اقصی کی بنیادوں میں یہودیوں کی تاریخ کیسے نظر آ گئی ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ بیت المقدس کے تاریخی مقامات کی مذہبی حیثیت کے تعین کے لیے قائم شو کمیٹی نے پوری وضاحت کے ساتھ بتایا تھا کہ مسجد اقصی اور اس کے ملحقہ تمام مقدس مقامات صرف مسلمانوں کی ملکیت ہیں، یہاں پر کسی دوسری قوم یا مذہب کی تہذیب کی کوئی باقیات نہیں ہیں۔فلسطینی وزارت خارجہ کی جانب سے روسی وزیرخارجہ سیرگی لافروف، عرب لیگ کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر نبیل العربی اور اسلامی تعاون تنظیم کے سربراہ ڈاکٹر اکمل الدین احسان اوگلو کے نام ایک مراسلہ تحریر کیا ہے جس میں ان سے کہا گیا ہے کہ وہ بیت المقدس اور مسجد اقصی کے حقائق مسخ کرنے کے ضمن میں جاری صہیونی سازشوں کی روک تھام کے لیے ٹھوس اقدامات کریں۔بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ بیت المقدس اور اس کی قدیم دیواروں کے اندر موجود ایک ایک اینٹ اور پتھر پر مسلمانوں کا حق ہے اور یہاں کی ایک ایک انچ زمین عالم اسلام کے لیے وقف شدہ ہے۔

مزید : عالمی منظر


loading...