جنرل ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں کانسٹیبل کا عملہ سے جھگڑا

جنرل ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں کانسٹیبل کا عملہ سے جھگڑا

لاہور ( جنرل رپورٹر) جنرل ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں زخمی پولیس کانسٹیبل کا عملہ سے جھگڑا کے بعد ایمرجنسی وارڈ میدان جنگ بن گیا جس سے ہسپتال کے تین ملازم زخمی ہوگئے۔ ہسپتال انتظامیہ کی درخواست پر زخمی کانسٹیبل ان کی بیوی اور ہسپتال کے عملہ کے 15 ملازمین کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ واقعات کے مطابق اتوار کی صبح ہڈیارہ کا رہائشی پولیس کانسٹیبل اپنی اہلیہ کے ہمراہ اپنے گاﺅں جارہا تھا کہ بیدیاں روڈ پر راستے میں دو ڈاکوﺅں نے لوٹ لیا۔ مزاحمت پر ڈاکوﺅں نے فائرنگ کرکے کانسٹیبل اور ان کی اہلیہ کو زخمی کردیا جسے طبی امداد کے یلئے جنرل ہسپتال لے جایا گیا جہاں علاج میں کوتاہی برتنے پر زخمی کانسٹیبل اور ان کے لواحقین کا ڈاکٹروں اور عملہ سے جھگڑا ہوگیا اور دونوں اطراف سے ایک دوسرے پر گھونسوں اور ڈنڈوں کا آزادانہ استعمال ہونے پر وارڈ میدان جنگ بن گیا۔ جہاں انہوں نے ہنگامہ آرائی کرنے کے الزام میں 15 افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔ زخمی کانسٹیبل کے لواحقین کے 3 افراد کو حراست میں بھی لے لیا گیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...