وزیراعظم نے صدر کے تھرڈ کلاس مجسٹریٹ کے سامنے جھکنے کا بیان نہیں دیا، ترجمان

وزیراعظم نے صدر کے تھرڈ کلاس مجسٹریٹ کے سامنے جھکنے کا بیان نہیں دیا، ترجمان

اسلام آباد (آن لائن) وزیر اعظم ہاﺅس کے ترجمان نے اس خبر کی سختی سے تردید کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ فرسٹ کلاس صدر کو تھرڈ کلاس کے سوئس مجسٹریٹ کے سامنے پیش نہیں ہونے دیں گے جبکہ اخباری تنظیموں سے مطالبہ کیاگیا ہے کہ وہ ایسی بے بنیاد خبر جاری کرنیوالے ادارے کےخلاف ضابطے کی کارروائی عمل میں لائیں۔ وزیراعظم ہاﺅس سے جاری ہونے والے بیان میں ترجمان کا کہنا تھا کہ ایک خبر ایجنسی (آن لائن نہیں ) نے گزشتہ روز ایک خبر جاری کی تھی جس میں وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کے حوالے سے کہا گیا تھا کہ سوئس حکام کو خط لکھنے سے متعلق حکومت جو جواب دے گی 12 جولائی کو پتہ چل جائے گا تاہم فرسٹ کلاس صدر کو تھرڈ کلاس سوئس مجسٹریٹ کے سامنے جھکنے نہیں دیں گے۔ترجمان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم نے اپنے دورہ لاہور کے دوران مختلف طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والی شخصیات جن میں صحافی ،وکلاءاور دیگر افراد شامل تھے سے ملاقاتیں کیں ان ملاقاتوں کے دوران وزیر اعظم نے کہیں بھی اس بات کا ذکر نہیں کیا ۔ترجمان کا کہنا تھا کہ یہ خبر مکمل طور پر بے بنیاد ،شرانگیز اور حقائق کے برعکس ہے اور یہ ان عناصر کی سپانسر کردہ ہے جو اداروں کے اندر بداعتمادی پیدا کر کے جمہوریت کو غیر مستحکم کرنا چاہتے ہیں ۔ترجمان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم نے ایڈیٹرز سے جو ملاقات کی اس کا تمام ریکارڈ موجود ہے جس میں سوال و جواب بھی شامل ہےں۔ اس کو دیکھا جاسکتا ہے اس میں کہیں بھی ایسے الفاظ نہیں ہیں۔ترجمان نے آل پاکستان نیوز پیپرز سوسائٹی (اے پی این ایس) کونسل آف پاکستان نیوز پیپرز ایڈیٹر (سی پی این ای)اور پریس کونسل آف پاکستان سے مطالبہ کیاہے کہ وہ اس خبر کی مکمل تحقیقات کریں اورایسی بے بنیاد خبر چلانے پر مذکورہ خبر ایجنسی کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے ۔ترجمان کا یہ بھی کہنا تھا کہ حکومت کو اس خبر پر مذکورہ ادارے کے خلاف کارروائی کا حق حاصل تھا لیکن ہم امید کرتے ہیں کہ اخباری نمائندگان اور باڈیز اس کے خلاف ایکشن لیں گی کیونکہ حکومت میڈیا کی آزادی پر مکمل یقین رکھتی ہے۔

مزید : صفحہ اول


loading...