سابق وزیر مملکت طارق انیس نیب ریفرنس سے باعزت بری

سابق وزیر مملکت طارق انیس نیب ریفرنس سے باعزت بری

شکر گڑھ (نامہ نگار) سابق وزیر مملکت رکن قومی اسمبلی چودھری طارق انیس کو نیب ریفرنس سے باعزت بری کردیا گیا۔ 2002ءمیں پرویز مشرف دور میں احتساب عدالت میں ناجائز اثاثے بنانے کے الزام میں ریفرنس داخل کرایا گیا طارق انیس نے ضمانت قبل از گرفتاری کرائی۔ بعدازاں لاہور ہائیکورٹ نے نیب عدالت میں ریفرنس کی سماعت کے خلاف حکم امتناعی جاری کردیا چند ماہ قبل ریفرنس کی دوبارہ سماعت شروع ہو گئی تاہم الزامات ثابت نہ ہونے پر عدالت نے رکن قومی اسمبلی کو بری کردیا ہے چودھری طارق انیس نے اخبار نویسوں کو بتایا کہ یہ جھوٹا ریفرنس تھا جو ان مدمقابل دانیال عزیز چودھری نے نیب عدالت میں بھجوایا اس کے باوجود میں نے دانیال عزیز کے والد انور عزیز چودھری کے خلاف تحصیل ناظم کا الیکشن جیتا اور 2008ءمیں تحصیل ناظم کی نشست سے مستعفی ہو کر دانیال عزیز کو آزاد حیثیت سے قومی اسمبلی کے الیکشن میں شکست دی انہوں نے کہا کہ مخالفین میری عوامی مقبولیت سے خائف ہیں وہ سیاست کے میدان میں میرا مقابلہ نہیں کرسکتے۔ یہی وجہ ہے کہ وہ منفی ہتھکنڈے استعمال کرتے ہی

مزید : ایڈیشن 1


loading...