گیس چوروں کے خلاف آپریشن 6 ماہ میں ہزار سے زائد بائی پاس 700 جعلی نیٹ ورک ختم کئے سہیل گلزار

گیس چوروں کے خلاف آپریشن 6 ماہ میں ہزار سے زائد بائی پاس 700 جعلی نیٹ ورک ختم ...

لاہور(لیاقت کھرل) سوئی ناردرن گیس کمپنی لاہور ریجن نے ایک ارب 16کروڑ روپے کی گیس چوری پکڑنے اور ریلوے چار بڑے ہسپتالوں سمیت سرکاری اداروں سے 150ملین کی کئی سالوں سے رکی ہوئی ریکوری کرنے کا دعویٰ کیا ہے، اس بات کا انکشاف جی ایم سوئی گیس کمپنی لاہور ریجن سہیل ایم گلزار نے ”پاکستان“ کو دیئے گئے ایک خصوصی انٹرویو میں کیا ہے، جی ایم سہیل ایم گلزار نے بتایا کہ تعیناتی کے 6ماہ کے دوران گیس چوروں کے خلاف آپریشن کے دوران15ہزار سے زائد مقامات پر چھاپے مارے، جس میں 1000سے زائد بائی پاس کے خلاف آپریشن کر کے ختم کر دیا گیا ہے، انہوں نے بتایا کہ 700سے زائد جعلی نیٹ ورک پکڑنے میں کامیابی حاصل کی گئی ہے انہوں نے بتایا کہ صنعتی اور کمرشل سیکٹر سمیت جعلی نیٹ ورک کے خلاف سب سے زیادہ آپریشن کیا گیا ہے جس میں سوئی گیس کمپنی لاہور ریجن نے گزشتہ ایک سال کے دوران ایک ارب 16کروڑ روپے کی گیس چوری پکڑنے میں کامیابی حاصل کر لی ہے جس میں تعیناتی کے 6ماہ کے دوران ایک ارب60کروڑ میں سے 60فیصد گیس چوروں سے کئے گئے ہیں، انہوں نے بتایا کہ 2931ٹیمپرڈ میٹرز کے خلاف کارروائی کی ہے انہوں نے بتایا کہ تعیناتی کے دوران ریلوے، آرمی، چلڈرن ہسپتال کارڈیک ہسپتال سمیت شہر کے چار بڑے ہسپتالوں سمیت ایک درجن سے زائد سرکاری اداروں سے عرصہ دراز سے رکی ہوئی اربوں روپے کی ریکوری کی گئی ہے جبکہ رینجرز، پنجاب اسمبلی، سول سیکرٹریٹ سمیت دو درجن سے زائد سرکاری اداروں سے اربوں روپے کی ریکوری کیلئے آخری نوٹس جاری کر دیئے ہیں انہوں نے بتایا کہ ایم ڈی سوئی گیس کمپنی محمد عارف حمید کے حکم پر ڈیڈ ڈیفالٹرز سے گزشتہ سال کی نسبت اس سال کے پہلے 6ماہ سے 100گنا زائد ریکوری کی ہے، جبکہ گزشتہ سال کی نسبت اس سال کے 6ماہ میں کمرشل ڈیڈ ڈیفالٹرز سے بھی 60ملین روپے کی ریکوری کی گئی ہے ایک سوال پر انہوں نے بتایا کہ تعیناتی کے دوران شہریوں کی شکایات کو ترجیح جبکہ شہریوں سے بدتمیزی کرنے والے اہلکاروں کے خلاف کارروائی کی گئی، انہوں نے بتایا کہ جعلی نیٹ ورک اور بائی پاس گیس چوری کے خلاف گزشتہ 6ماہ کی تعیناتی کے دوران90سے 95فیصد کامیابی حاصل کی ہے جس میں احمد ٹاﺅن، لکھو ڈیئر روڈ، شالیمار سمیت شہر کے گرد و نواح میں دو درجن سے زائد قائم ہونے والی نئی آبادیوں میں جعلی نیٹ ورک کا خاتمہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس کے علاوہ کمرشل اور صنعتی سیکٹروں پر گیس چوروں کے خلاف آپریشن کر کے کروڑوں کی ماہانہ چوری ہونے والی گیس کا خاتمہ کر دیا گیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...