عدالتیں نہیں انسان اپنے کردار سے تھرڈ کلاس ہوتا ہے،مشاہد اللہ خان

عدالتیں نہیں انسان اپنے کردار سے تھرڈ کلاس ہوتا ہے،مشاہد اللہ خان

اسلام آباد(آئی این پی) مسلم لیگ (ن) کے سیکرٹری اطلاعات سینیٹر مشاہداللہ خان نے وزیراعظم کے اس بیان کہ فرسٹ کلاس صدر کو تھرڈ کلاس سوئس مجسٹریٹ کے سامنے پیش نہیں کریں گے پر کہا ہے کہ حکمران باریکیوں کو نہیں سمجھتے‘ عدالتوں کا احترام کیا جاتا ہے ، عدالتیں تھرڈ کلاس نہیں ہوتیں ،انسان اپنے کردار سے تھرڈ کلاس ہوتا ہے‘ احتسابی اداروں کا کام ملک میں کرپشن کو روکنا ہے سیاست سے ان کا تعلق نہیں ہوتا‘ ملکی مسائل کا حل صرف اور صرف فوری انتخابات ہیں، نئے انتخابات کیلئے جلداز جلد نگران حکومت کا قیام ناگزیر ہے۔ اتوار کو ”آئی این پی“ سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت کو باریکیوں کا احساس نہیں اور نہ ہی وہ انہیں سمجھ سکتی ہے۔ عدالتوں کا احترام ہوتا ہے کوئی تھرڈ کلاس عدالت نہیں ہوتی بلکہ انسان اپنے کردار سے پہچانا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقتدار کے ایوانوں میں بیٹھنے والوں کو سوچنا چاہئے کہ ایسے کام ہی نہ کریں جس سے ان کو عدالتوں کے سامنے پیش ہونا پڑے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ نیب کو کرپشن روکنی چاہئے اس میں سیاسی مصلحتوں کو آڑے نہیں آنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ احتسابی اداروں کا مینڈیٹ کرپشن کو روکنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کو فوری طور پر ملک میں نئے الیکشن کروانے کا اعلان کرنا چاہئے تاکہ عوام اپنا فیصلہ دے سکیں۔ اس سے ملکی مسائل میں کمی واقع ہوگی۔

مزید : صفحہ آخر


loading...