سول و فوجی ڈاکٹر آگئے ،ینگ ڈاکٹرز کی سینئرز کو دھمکیاں، ہسپتالوں کے حالات معمول پر آناشروع ہوگئے

سول و فوجی ڈاکٹر آگئے ،ینگ ڈاکٹرز کی سینئرز کو دھمکیاں، ہسپتالوں کے حالات ...
سول و فوجی ڈاکٹر آگئے ،ینگ ڈاکٹرز کی سینئرز کو دھمکیاں، ہسپتالوں کے حالات معمول پر آناشروع ہوگئے

  


لاہور،راولپنڈی ، فیصل آباد، گوجرانوالہ ،سرگودھا(مانیٹرنگ ڈیسک) حکومتی مشینری حرکت میں آنے کے بعد ہسپتالوں میں حالات معمول پرآناشروع ہوگئے ہیں جبکہ پاک فوج کے ڈاکٹر بھی ہسپتالوں میں پہنچ گئے ہیں اور بعض مقامات پر سینئرز کی جانب سے کام شروع کردیاگیاہے تاہم اُنہیں ینگ ڈاکٹروں کی طرف سے حراساں کیاجارہاہے ۔حکومت پنجاب کے ترجمان کے مطابق حالات معمول پر آنا شروع ہوگئے ہیں اور تقریباً تمام ہسپتالوں کی ایمرجنسی ، اوپی ڈی اور اِن ڈور میں کام شروع ہوگیاہے ۔میو ہسپتال کے ایم ایس کے مطابق آﺅٹ ڈور میں 30ڈاکٹر کام کررہے ہیں ۔علامہ اقبال میڈیکل کالج کے پرنسپل ڈاکٹر جاوید اکرم کے مطابق جناح ہسپتال کے آﺅٹ ڈور میں نو ڈاکٹر کام کررہے ہیں ۔الائیڈ ہسپتال سمیت راولپنڈی کے تین بڑے ہسپتالوں کے علاوہ لاہور کے تقریباً تمام ہسپتالوں میں فوجی ڈاکٹر ڈیوٹی پر پہنچ گئے ہیں ۔فیصل آباد میں ینگ ڈاکٹرز کی جگہ سینئرز نے علاج معالجہ شروع کردیاہے ۔گوجرانوالہ میں ینگ ڈاکٹروں نے کام کرنے والے سینئرز کو حراساں کرناشروع کردیاہے ۔ ایڈیشنل ایم ایس ڈاکٹر سرفراز کے مطابق ینگ ڈاکٹرز کام کرنے والے اپنے سینئر ز کو فون کرکے سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہے ہیں ۔اُدھر سرگودھامیں ینگ ڈاکٹروں نے ہڑتال سے لاتعلقی کا اعلان کردیاہے ۔ینگ ڈاکٹرز کے مطابق ڈی ایچ کیو اور دیگرہسپتالوں میں معمول کا کام جاری ہے ۔

مزید : لاہور /اہم خبریں


loading...