خسرہ کی وباءکا مقابلہ مل کر کرنا ہوگا، کہیں ایسا نہ ہو کہ ہاتھ ملتے رہ جائیں: شہباز شریف

خسرہ کی وباءکا مقابلہ مل کر کرنا ہوگا، کہیں ایسا نہ ہو کہ ہاتھ ملتے رہ جائیں: ...
خسرہ کی وباءکا مقابلہ مل کر کرنا ہوگا، کہیں ایسا نہ ہو کہ ہاتھ ملتے رہ جائیں: شہباز شریف

  


لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب کے وزیراعلیٰ شہباز شریف نے کہا ہے کہ خطرہ کی وباءسے پنجاب میں اب تک 181 بچے جاں بحق ہو چکے ہیں، ہم نے اس عفریت کا مقابلہ مل کر نہ کیا تو کہیں ایسا نہ ہو ہم ہاتھ ملتے رہ جائیں۔ ہیلتھ ریفارمز کانفرنس کے افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے شہبازشریف نے کہا کہ سینئر ڈاکٹر انتظامی امور اور ہسپتالوں کے باتھ رومز کی دیکھ بھال میں مصروف ہیں جبکہ مریضوں کی طرف کوئی توجہ نہیں، اگر سینئرڈاکٹر مریضوں کے علاج پر توجہ دیں تو ایسی وبا پر قابو پایاجا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بجلی کے بحران پر قابو پانے سے دہشت گردی کے خاتمے کی باتیں درست نہیں، اس کیلئے نظام تبدیل کرنا ہو گا، غیر معیاری تعلیم، ناانصافی اور صحت کی سہولتوں کا فقدان دہشت گردی کے بنیادی عوامل ہیں۔ماڈل ٹاو¿ن میں شمسی توانائی کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھاکہ چھوٹے کاشتکاروں کی سہولت کیلئے انہیں شمسی توانائی سے چلنے والے ٹیوب ویل دینے کا سلسلہ جلد شروع کیا جاے گا۔

مزید : لاہور