مہنگائی کی شرح 46سال کی کم ترین سطح پر ہے ، چیف شماریات آصف باجوہ

مہنگائی کی شرح 46سال کی کم ترین سطح پر ہے ، چیف شماریات آصف باجوہ

اسلام آباد(آن لائن) چیف شماریات آصف باجوہ نے دعوی کیا ہے کہ اس وقت مہنگائی کی شرح گزشتہ 46 سال کی کم ترین سطح پر ہے انفرادی طور پر اشیائے ضروریہ اور خوردونوش کی قیمتوں میں ہوشرباء اضافے کے باوجود پاکستان ادارہ شماریات میں رائج طریقہ کار مہنگائی کی شرح کو کم ترین سطح پر دکھا رہا ہے بین الاقوامی منڈیوں میں تیل اور دیگر اشیاء کی قیمتوں میں کمی اور حکومتی پالیسیوں کو مہنگائی کی شرح میں کمی کی وجہ قرار دیتے ہوئے آصف باجوہ کا کہنا ہے کہ اگر اندرونی اور بیرونی عوامل تبدیل نہیں ہوتے تو مہنگائی کی شرح سنگل ڈیجٹ ہی میں رہے سالانہ بنیاروں پر مہنگائی کی شرح میں تین اعشاریہ دو فیصد اضافہ ہوا ہے جبکہ جون کے دوران مہنگائی کی شرح میں عشاریہ چھ چار فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیاپاکستان بیورو شماریات کے چیف آصف باجوہ نے جمعہ کو ماہانہ بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ماہانہ بنیادوں پر ٹماٹرکی قیمت میں 61.1 فیصد ، آلو 45.5 فیصد ،انڈے8.51فیصد، تازہ سبزیاں 5.9فیصد، سگریٹ4.27فیصد، چاول 1.4 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا جبکہ مجموعی طور پر مالی سال دوہزار پندرہ سولہ میں مہنگائی کی شرح دو عشاریہ آٹھ چھ فیصد رہی، دال چنا49.43فیصد، دال ماش48.1فیصد، بیسن41.86فیصد، آلو 20.13 فیصد، سگریٹ 18.43 فیصد،اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

مزید : کامرس