ملک میں اسلامی نظام کے نفاذ سے دہشتگردی کا خاتمہ ممکن ہے: حافظ سعید

ملک میں اسلامی نظام کے نفاذ سے دہشتگردی کا خاتمہ ممکن ہے: حافظ سعید

لاہور(خبر نگار خصوصی)امیر جماعۃالدعوۃ پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعیدنے کہا ہے کہ پانامہ لیکس جیسی بدنامیوں سے جان چھڑانے کیلئے ملک میں اسلامی نظام کا نفاذ بہت ضروری ہے۔ دہشت گردی کا خاتمہ اور امن و امان کا قیام بھی اسی طرح ممکن ہے۔بیرونی سازشوں کے توڑ کیلئے فرقہ واریت ختم اور ملک میں اتحادویکجہتی کا ماحول پیداکرنے کی ضرورت ہے۔کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کی بھرپور مددوحمایت جاری رکھیں گے۔ رمضان المبارک میں ہر شخص تو بہ و استغفار اور اپنی اصلاح کرے۔ گھروں میں قرآن و سنت نافذ اوربچوں کی تربیت دینی بنیادوں پر کی جائے۔ وہ جامع مسجد القادسیہ میں جمعۃالوداع کے بڑے اجتماع سے خطاب اوربعد ازاں مختلف وفود سے گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پرہزاروں مردوخواتین نے ان کی امامت میں نماز جمعہ ادا کی۔ خطبہ جمعۃالوداع کے دوران شدید رش دیکھنے میں آیا۔ سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ حافظ محمد سعید نے اپنے خطاب میں کہاکہ کلمہ طیبہ کے نام پر حاصل کیا گیا پاکستان مسلمانوں کیلئے اللہ تعالیٰ کی بہت بڑی نعمت ہے۔ حکمرانوں کو چاہیے کہ وہ اس کا شکر ادا کرتے ہوئے ملک میں اسلامی شریعت نافذ کریں‘ امریکہ و یورپ کے احکامات سے جان چھوٹ جائے گی اور دشمن کو آپ کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرنے کی جرأت نہیں ہو گی۔ اسی طرح اگر آپ چاہتے ہیں کہ مسلمان ملکوں میں باہمی لڑائی جھگڑے ختم ہوں‘ یہ ملک امن و امان کے گہوارے بن جائیں اور عالم اسلام کی سطح پر اتحاد کی کیفیت پیدا ہو تو اس کابھی صرف ایک ہی حل ہے کہ اسلامی شریعت کو عملی طور پر نافذ کیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ بھارت و امریکہ پاکستان کے ایٹمی پروگرام کو نقصانات سے دوچار کرنے کیلئے معاہدے کر رہے ہیں۔ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ کو نشانہ بنانے کی کوششیں کی جارہی ہیں اور اس مقصد کیلئے بے پناہ سرمایہ خرچ کیا جارہا ہے لیکن افغانستان میں شکست کی طرح ان کی پاکستان کیخلاف سازشیں بھی کامیاب نہیں ہوں گی۔ انہوں نے کہاکہ امریکی ڈو مور کی رٹ لگائے ہوئے ہیں اور پاکستانی حکمرانوں و سیاستدانوں کو ان کا حکم ماننے کی عادت پڑی ہوئی ہے۔

مزید : صفحہ آخر