ملتان میں سول سیکرٹریٹ لاپتہ‘سرائیکی جماعتوں کا حکومت کیخلاف مظاہرہ 

ملتان میں سول سیکرٹریٹ لاپتہ‘سرائیکی جماعتوں کا حکومت کیخلاف مظاہرہ 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 ملتان (سٹی رپورٹر)صوبہ سرائیکستان کے قیام تک احتجاج جار ی رہے گا۔ صوبے اور سب سول سیکرٹریٹ کا وعدہ پورا نہ کر کے حکمرانوں نے وسیب کے کروڑوں انسانوں سے بد عہدی کی آئین کی دفعہ 62-63 کا اطلاق ہونا چاہئے۔ ان خیالات کا اظہار سرائیکستان صوبہ محاذ اور پاکستان سرائیکی پارٹی کی طرف سے صوبے کا وعدہ پورا نہ کرنے پر حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہرے کے دوران(بقیہ نمبر60صفحہ12پر)


 کیا گیا۔ اس موقع پر سرائیکی رہنماؤں ملک اللہ نواز وینس، ظہور دھریجہ، مہر مظہر کات، ملک جاوید چنڑ، سید اختر گیلانی، مہر ذیشان سہارن، ندیم خان لاشاری اور پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنماؤں بابو نفیس انصاری، محترمہ عابدہ بخاری اور سید مطلوب شاہ بخاری نے خطاب کیا۔ جبکہ مظاہرے میں معروف شاعر حافظ خدا بخش واقف ملتانی، ملک خاور نائچ، ناصر ظہیر، پروفیسر پرویز قادر خان، ایاز محمود دھریجہ، ممتاز دھریجہ،ملک محمد یعقوب وینس، ملک محمد سلیم، حاجی عید احمد دھریجہ، جمال خان، حسن شہزاد بیگ، محمد اکرام انصاری، افضال بٹ، ممتاز احمد دھریجہ، ملک عرفان بھٹی، شعیب خان ٹانگرا، مہر ظفر اقبال ہراج، مہر ثمر عباس ہراج، ملک علی حیدر بھٹی، اختر سومرو، سبطین خان لنگاہ، خرم شہزاد، مشتاق احمد، جمال الدین، غلام عباس ملنہاس، احمد بخش خان چانڈیہ اور دیگر نے شرکت کی۔سرائیکی رہنماؤں نے کہا حکمرانوں نے وسیب سے دھوکہ کیا۔ صوبے کا لولی پاپ دے کر ووٹ لئے اور اقتدار لیکر ایک طرف ہو گئے، وسیب کے لوگ آئندہ الیکشن میں ان کو بدترین شکست دیں گے،انہوں نے کہا لاہور میں سرکاری سطح پر رنجیت سنگھ کا تہوار منانے والوں کوکہتے ہیں ہمارا ہیرو کافر رنجیت سنگھ نہیں، نواب مظفر خان شہید ہے۔ انہوں نے کہا جلال پور پیروالا کے بعد ملتان میں خون کی ہولی کھیلی گئی آج پورے وسیب میں صف ماتم بچھی ہوئی ہے وزیراعلیٰ تو کیا کسی صوبائی وزیر یا آئی جی نے ملتان آنے کی زحمت گوارا نہیں کی۔ انہوں نے کہا 12 کروڑ کا صوبہ ایک آئی جی کس طرح سنبھال سکتا ہے وسیب میں لوگ مرر ہے ہیں حکمران لاہور میں رنجیت سنگھ کا تہوار منانے میں مصروف ہیں۔ سرائیکی رہنماؤں نے رکاوٹ ڈالنے پر وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ اور جہانگیرترین کی سخت الفاظ میں مذمت کی اور مخدوم شاہ محمود قریشی سے استعفی کا مطالبہ کیا۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا وعدہ پورا نہ کر کے تحریک انصاف کی پوری قیادت صادق اور امین نہیں رہی آئین کی دفعہ 62-63 کے تحت ان کو نااہل قرار دیا جائے۔ انہوں نے کہا ہم بے شناخت اور لولہا لنگڑا صوبہ قبول نہیں کریں گے۔ ٹانک،ڈی آئی خان، میانوالی، بھکر، جھنگ اور ساہیوال سمیت مکمل صوبہ لیں گے۔ جنوبی پنجاب کو گالی سمجھتے ہیں، بہاولپور اور ملتان صوبہ کی شرارت وسیب اور خطے کو تقسیم کرنے اور ایک دوسرے سے لڑانے کی خوفناک سازش ہے یہ سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ اس موقع پر حکمرانو حیا کرو اپنا وعدہ وفا کرو، بہاولپور نہ ملتان صوبہ صرف سرائیکستان، تیری شان میری شان سرائیکستان سرائیکستان، تخت لاہور تخت پشور ڈوہیں چور، گھن تے رہسوں گھن تے رہسوں سرائیکی صوبہ گھن تے رہسوں کے فلک شگاف نعرے لائے گئے۔
سول سیکرٹریٹ