300یونٹس والے گھریلو، 94فیصد کمرشل اور زیرو ریٹیڈ صنعتی بجلی صارفین نئی سے سے مستثنی 

300یونٹس والے گھریلو، 94فیصد کمرشل اور زیرو ریٹیڈ صنعتی بجلی صارفین نئی سے سے ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وزارتِ توانائی (پاورڈویژن) نے حالیہ نیپرا کی جانب سے دو سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمتوں کے تعین پر وضاحت دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومتِ نے 300یونٹس استعمال کرنیوالے گھریلو، 94%کمرشل اورزیرو ریٹیڈ(برآمدی)صنعتی بجلی کے صارفین کیلئے قیمت میں کوئی اضافہ نہیں کیا گیا۔پاورڈویژن کے ترجمان نے حالیہ نیپرا کی جانب سے دو سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمتوں کے تعین پر وضاحت دیتے ہوئے ایک بیان میں کہاہے کہ نیپرا کی طرف سے 1.49روپے فی یونٹ تمام صارفین کیلئے اضافے کی منظوری کے باوجود 300یونٹس استعمال کرنیوالے گھریلو، 94فیصد کمرشل اور زیروریٹیڈ صنعتی صارفین کیلئے حکومت کی طرف سے بجلی کی قیمت میں کوئی اضافہ نہیں کیا گیا۔حکومتِ پاکستان کی طرف سے عوام کو ان قیمتوں کی ایڈجسٹمنٹ کی وجہ سے اثرات کو کم سے کم کرنے کیلئے تمام تر کوششیں کی گئیں۔ان کوششوں کی وجہ سے کم یونٹس استعمال کرنیوالے صارفین پر کوئی اضافی بوجھ نہیں ڈالا گیا۔300یونٹس استعمال کرنیوالے گھریلو صارفین کل صارفین کا 75فیصد ہیں اور ان کیلئے موجودہ بجٹ میں 54ارب روپے کی سبسڈی رکھی گئی تاکہ ان کی بجلی کی قیمت نہ بڑھائی جائے۔اسی طرح 300یونٹس سے زیادہ استعمال کرنیوالے صارفین کیلئے بھی حکومت نے نیپرا کی طرف سے متعین کردہ اضافہ یعنی 1.49روپے کی بجائے آدھی قیمت یعنی صرف 0.75 پیسے فی یونٹ اضافہ کیا ہے۔کمرشل صارفین جن کا لوڈ5کلوواٹ تک ہے اور جو کل کمرشل صارفین کا 94فیصد ہیں، کیلئے بھی موجودہ بجلی کی قیمت برقرار رہے گی اور کوئی اضافہ نہیں کیا گیا۔زیرو ریٹیڈ (برآمدی)صنعتی صارفین کیلئے موجودہ 75پیسے فی یونٹ برقرار رہے گا۔زرعی ٹیوب ویلوں کیلئے نیپراکے مقرر کردہ فی یونٹ کی قیمت سے تقریبا 50فیصد کم فی یونٹ ریٹ پربجلی فراہم کی جائے گی تاکہ زرعی صارفین کو زیادہ سے زیادہ فائدہ ملے۔
بجلی صارفین/ نئی قیمت

مزید :

صفحہ اول -