نہرون اور بیراجوں سے ایک ہزار میگاواٹ تک بجلی پیدا ہو سکتی ہے: فیصل آباد چیمبر 

نہرون اور بیراجوں سے ایک ہزار میگاواٹ تک بجلی پیدا ہو سکتی ہے: فیصل آباد ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


فیصل آباد (بیورورپورٹ) ملک بھر میں پھیلے ہوئے 56073کلو میٹر طویل نہروں کے جال سے پوری طرح فائدہ نہیں اٹھایا جا رہا حالانکہ نہروں اور بیراجوں سے ایک ہزار میگا واٹ تک بجلی پیدا کی جا سکتی ہے جبکہ صنعتی، کاروباری، تجارتی شعبہ کو بھی سیلف پاور جنریشن کے چھوٹے یونٹس لگانے کی اجازت ملنی چاہیے تاہم حکومت نے  نہروں کے ارد گردموجود صنعتوں کو سیلف جنریشن کیلئے چھوٹے پن بجلی گھر لگانے کے سلسلہ میں ہر ممکن سہولیات فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ  مستقبل میں بجلی کی بڑھتی ہوئی ضرورتوں کو پورا کرنے کیلئے نہروں پر چھوٹے جنریشن یونٹ لگانے کے علاوہ بجلی کے ترسیلی نقصانات سے بچا جا سکے۔ یہ بات فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈانڈسٹری کے سینئر نائب صدر میاں تنویر احمد نے پنجاب پاور ڈویلپمنٹ بورڈ کے ایک پانچ رکنی وفد سے ملاقات کے دوران بتائی۔ انہوں نے بتایا کہ پنجاب بھر میں نہروں کا جال بچھا ہوا ہے۔ ان نہروں کے اردگرد موجودہ کاروباری اداروں کو اپنی انفرادی اور اجتماعی ضروریات کیلئے واپڈا کی بجائے خود سستی پن بجلی پیدا کرنی چاہیے تاکہ ان کی پیداواری لاگت کو کم کیا جا سکے۔ انہوں نے حکومت کی طر ف سے سیلف جنریشن کیلئے لگائے جانے والے چھوٹے یونٹوں کی سکیم کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ صنعتوں کے علاوہ کاروباری اداروں کو بھی یہ سہولت ملنی چاہیے۔ میاں تنویر احمد نے بتایا کہ پنجاب آبادی کے لحاظ سے پاکستان کا سب سے بڑا صوبہ ہے اور ملک کی زیادہ تر صنعتیں اس صوبہ میں واقع ہیں جس کی وجہ سے پنجاب کا جی ڈی پی میں حصہ ساٹھ فیصد ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئی صنعتوں کے قیام کی وجہ سے بجلی کی ضروریات میں مسلسل اضافہ ہور ہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ پنجاب کا نام پانچ دریاؤں کی نسبت سے ہے لیکن ملک بھر میں پھیلے ہوئے 56,073کلومیٹر نہروں کے اس جال سے پوری طرح فائدہ نہیں اٹھایا جا سکاحالانکہ نہروں اور بیراجوں سے چھ سو سے ایک ہزار میگا واٹ تک بجلی پیدا کی جا سکتی ہے جس سے فوری فائدہ اٹھانے کی ضرورت ہے۔ اس موقع پر پنجاب انرجی ڈویلپمنٹ بورڈ کی ڈائریکٹر لیگل محترمہ عفیفہ جبیں نے بتایا کہ حکومت نہروں کے ارد گردموجود صنعتوں کو سیلف جنریشن کیلئے چھوٹے پن بجلی گھر لگانے کے سلسلہ میں ہر ممکن سہولتیں دے گی نیز اس سلسلہ میں منصوبوں کے قابل عمل ہونے کی رپورٹوں کی تیاری کے علاوہ محکمہ نہر سے متعلقہ معاملات کے حل میں بھی صنعتکاروں کی ہر ممکن راہنمائی اور معاونت کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ وہ بہت جلد دوبارہ پوری تیار ی کے ساتھ فیصل آباد چیمبر آئیں گی تاکہ سیلف جنریشن میں دلچسپی رکھنے والوں کو مزید معلومات مہیا کی جا سکیں۔ انہوں نے بتایا کہ فی الحال اس سکیم کا دائرہ کار صرف صنعتوں تک محدود ہے جبکہ کاروباری ادارے اس میں شامل نہیں۔
 اس موقع پر پنجاب پاور ڈویلپمنٹ بورڈ کے مشیر ملک احمد، ڈائریکٹر ڈاکٹر مظہر اور منیجر عامر شہزاد بٹ کے علاوہ فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈانڈسٹری کے انجینئر عاصم منیر، شاہد ممتاز باجوہ، میاں محمد سعید، رانا سکندر اعظم خاں اور رانا اکرام اللہ بھی موجود تھے۔ آخر میں سینئر نائب صدر میاں تنویر احمد نے پنجاب پاور ڈویلپمنٹ بورڈ کی ڈائریکٹر لیگل میڈم عفیفہ جبیں کو فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈانڈسٹری کی اعزازی شیلڈ پیش کی۔

مزید :

کامرس -