یوتھ لیڈرشپ سمٹ’ینگ لیڈز کانفرنس‘کا آغاز ہو گیا

یوتھ لیڈرشپ سمٹ’ینگ لیڈز کانفرنس‘کا آغاز ہو گیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(جنرل رپورٹر) یوتھ لیڈرشپ سمٹ 'ینگ لیڈز کانفرنس' (YLC) 2019 کا آغاز ہو گیا۔ اس سمٹ کے پہلے ہی دن بھرپور توانائی، جوش و جذبہ اور عزم نمایاں تھا جہاں ایونٹ میں ملک کی ممتاز کاروباری، سرکاری اور نجی کمپنیوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے شرکت کی۔پاکستان بھر سے تقریباً 326 نوجوان اور توانائی سے بھرپور شرکا اس ایونٹ میں 6 دن تک ایک ساتھ رہیں گے اور انہیں بااثر خطیبوں، ہنر کی حامل ورکشاپ اور سرگرمیوں سے لیڈرشپ کی ٹریننگ اور سیکھنے کا موقع ملے گا۔ کامران رضوی اور YLC 2019 کے پراجیکٹ منیجر اسامہ ناصر سمیت YLC کے بانی اراکین نے اپنے پارٹنرز اور SoL کے بورڈ اراکین اور مشیروں کے ہمراہ شرکا اور تقریب کے حاضرین کا استقبال کیا۔اسکول آف لیڈرشپ کے ڈائریکٹر کامران رضوی نے 'Transcend Limits'کے موضوع پر گفتگو کے ساتھ ایونٹ کا آغاز کیا جس کا مقصد نوجوانوں بااختیار بنانا تھا تاکہ وہ اپنے اندر چھپی اصل صلاحیت کو پہچانیں اور اپنی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کر سکیں۔ کامران رضوی نے شرکا کو YLC کے نظریے اور اقدار سے روشناس کرانے کے ساتھ ساتھ YLC چیمپیئن اسامہ ناصر کا بھی تعارف کرایا۔ اس کے بعد simulation کے ذریعے حاضرین کو اس سال کے موضوع(theme) یعنی 'ذاتی قیادت اور اقدار (Personal Leadership & Values) سے آگاہ کرتے ہوئے اس کے پیچھے چھپی سوچ پر بھی روشنی ڈالی۔بانی پارٹنرEBM کے ڈائریکٹر شاہ زین منیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے اقدامات کو دیکھتے ہوئے بہت خوشی محسوس ہوتی ہے۔ اس طرح کے فورمز نوجوان افراد کو کمسنی سے جوانی کی طرف قدم رکھتے ہوئے منصوبہ میں مدد کرتے ہیں تاکہ نوجوان کی طرف قدم رکھتے ہوئے وہ اپنی صلاحیتوں کو پہچان سکیں۔ اس طرح پروان چڑھانے اور تربیت سے یہ وہ مزید باعتماد اور اس قابل ہو سکتے ہیں۔ یہ انہیں کام کی جگہوں اور برادریوں میں نئی نسل کے رہنما بننے کے لیے تیار کریں گے۔اسکول آف لیڈرشپ کے ڈائریکٹر عمیر جالیا والا نے YLC کی شاندار ترقی کے حوالے سے حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ YLC ایسے بہترین نوجوان لوگوں کے لیے شاندار فورم ہے جو دنیا میں کچھ کرنے کا عزم اور جوش و جذبہ رکھتے ہیں۔ یہ ایونٹ شرکا کے لیے نئی راہیں کھولے گا اور انہیں اس قابل بنائے گا وہ خود سے چیلنجز کا سامنا کر سکیں۔ یہ انہیں سماجی مسائل سے نمٹنے، اپنی صلاحیتوں کو پہچاننے اور مشہور کاروباری شخصیات سے رابطے قائم کرنے میں مدد کرے گا۔ یہ بات کہنے میں فخر محسوس کرتے ہیں کہ YLC کو قائم ہوئے 18سال ہو چکے ہیں جو سینکڑوں لوگوں کی زندگیوں پر اثر انداز ہوا اور وہ یہاں سے نئی امیدوں اور زندگی بدل دینے والے تجربات لے کر باہر نکلے۔YLC اور مختلف کمپنیوں کے ماہرین نے بھی شرکا سے خطاب کیا اور انہیں اپنی ذاتی اور پیشہ ورانہ زندگیوں کے تجربات سے آگاہ کیا۔
پہلے دن مختلف جدید سیشنز اور سرگرمیاں انجام دی گئیں جن میں سے ایک #PKNHDR نامی سرگرمی پاکستان میں اقوام متحدہ کے رابطہ کار نیل بوہن کی تھی جس میں نیشنل ہیومن ڈیولپمنٹ رپورٹ کے حوالے سے عالمی بحث پر شرکا نے بھرپور شرکت کی اور مضبوط رابطہ قائم کیا۔ اس دوران تفصیل بتائی گئی کہ پاکستان کو کس چیز کی ضرورت ہے اور اس بات پر بھی گفتگو کی گئی ہے کہ نوجوان کیوں اور کس طرح ملک کے مستقبل کو سنوارنے کے لیے اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔اس دن کامران رضوری کی جانب سے استعداد کار بڑھانے کے سیشن کا بھی انعقاد کیا گیا جس کا موضوع تھا 'Get an 'A' on the 'I'۔۔ اشرف

مزید :

کامرس -