پروجیکٹ کے انتخاب، رقم کی فراہمی،بروقت تکمیل میں اکاؤنٹنٹس اہم کردار ادا کر سکتے ہیں، اے سی سی اے

پروجیکٹ کے انتخاب، رقم کی فراہمی،بروقت تکمیل میں اکاؤنٹنٹس اہم کردار ادا کر ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(پ ر)”بنیادی ڈھانچے میں پائے جانے والے تفاوت کے خاتمے کی غرض سے پروجیکٹ کے انتخاب، رقم کی فراہمی اور بروقت تکمیل میں اکاؤنٹنٹس اہم کردار ادا کر سکتے ہیں؛ حکومتوں کے پاس لازماً ایک پیشہ ور ٹیم ہونا چاہیے جو بنیادی ڈھانچے کے پروجیکٹس سے وابستہ اہم خطرات کا خاتمہ کرنے کے ساتھ اضافی سرمایہ کاری کے فوائد سے فائدہ اٹھا سکے؛پاکستانی اکاؤنٹنٹس کی پیش گوئی کے مطابق، اس کے بنیادی ڈھانچے میں 335 ارب امریکی ڈالرز کی سرمایہ کاری کی گئی تھی جبکہ تفاوت 117.9ارب امریکی ڈالرز کا ہو گا۔لہٰذا مطلوبہ سرمایہ کاری اور کی گئی سرمایہ کاری کے درمیان فرق 35 فیصد ہے“یہ ہیں وہ انکشافات جو ایسوسی ایشن آف چارٹرڈسرٹیفائیڈ اکاؤنٹنٹس (اے سی سی اے)کی جانب سے ”اکاؤنٹنٹس کس طرح عالمی بنیادی ڈھانچے میں تفاوت ختم کر سکتے ہیں“ کے عنوان جاری کردہ رپورٹ میں سامنے آئے ہیں۔اس رپورٹ میں شامل یہ اکتشافات اور سفارشات بہترین عالمی طریقوں کی بنیاد پر ہیں تاکہ حکومتیں اپنے بنیادی ڈھانچے میں پایاجانے والاتفاوت ختم کر سکیں اور اس کے لیے اکاؤنٹنٹس اپناتعاون پیش کر سکتے ہیں اور مرکزی کردار ادا کرسکتے ہیں۔ اس رپورٹ کی تیاری میں پروفیشنل اکاؤنٹنٹس آف کینیڈا (سی پی اے کینیڈا) نے بھی اے سی سی اے کے ساتھ شراکت کی ہے۔
دنیا بھر میں بنیادی ڈھانچہ اقتصادی اور سماجی ترقی کے لیے انتہائی اہمیت رکھتا ہے۔مواصلات کے نیٹ ورک سے لے کر - جو افراد اور اشیاء کو محفوظ اور مؤثر انداز میں ایک جگہ سے دوسری جگہ پہنچانے کے کام کرتا ہے - یوٹیلیٹی سسٹمز تک - جو بقاء کے لیے لازمی پاور اور خدمات فراہم کرتے ہیں،اور ان تمام نظام فنڈنگ پر بہت زیادہ انحصار کرتے ہیں۔’عالمی بنیادی ڈھانچے میں فرق‘ کی اصطلاح بنیادی ڈھانچے کے لیے مطلوبہ سرمایہ کاری اور ضرورت کو پورا کرنے کے لیے دستیاب وسائل کے درمیان تفاوت کی نشاندہی کرتی ہے۔صرف سنہ 2018ء میں سرمایہ کاری کا یہ تفاوت 400 ارب امریکی ڈالرز سے بھی تجاوز کر گیا تھا اور توقع ہے کہ سنہ 20401تک یہ تفاوت کر 14 کھرب امریکی ڈالرز سے تجاوز کر جائے گا۔سروے میں شامل جواب دہندگان نے (جن کا تعلق جنوبی ایشیا سے تھا) اپنے ممالک میں بنیادی ڈھانچوں کی ضرورتیں پورا کرنے کے لیے تین بڑی رکاوٹوں کی نشاندہی کی: نواسی (89)فیصد کے مطابق بدعنوانی اِن رکاوٹوں میں سب سے بڑی رکاوٹ ت

مزید :

کامرس -