گھریلو صارفین کیلئے گیس کی قیمتیں بڑھانا سرادر ظلم ہے: کنز یوم ایسوسی ایشن 

گھریلو صارفین کیلئے گیس کی قیمتیں بڑھانا سرادر ظلم ہے: کنز یوم ایسوسی ایشن 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


کراچی(اکنامک رپورٹر) کنزیومرز ایسو سی ایشن آف پاکستان کے چیئر مین کوکب اقبال نے کہا ہے کہ گھریلو صارفین کے لئے گیس کی قیمتیں بڑھاناسراسر ظلم ہے انہوں نے کہا کہ حکومت جس تیزی سے مختلف اشیاء کی قیمتیں بڑھا رہی ہے اتنی ہی تیزی سے عام آدمی کی آمدنی میں اضافہ نہیں ہورہا ہے جس سے غریب عوام کے چولہے ٹھنڈے ہوجائیں گے کوکب اقبال نے کہا کہ سی این جی کی قیمت میں بھی 20 روپے فی کلو اضافہ کردیا گیا ہے جس کی وجہ سے ذرائع آمد و رفت کی مشکلات میں بھی اضافہ ہو جائے گا انہوں نے کہا کہ ہفتہ میں تین دن سی این جی اسٹیشن بند ہونے کی وجہ سے لوگوں کو مجبوراََ مہنگا پیٹرول خرید نا پڑتا ہے جس سے پیٹرول کی کھپت میں اضافہ ہوجاتا ہے اور حکومت کو اربوں روپے کا زر مبادلہ خرچ کرکے پیٹرولیم مصنوعات درآمد کرنی پڑتی ہیں کوکب اقبال نے کہا کہ سی این جی اور پیٹرول اتنا مہنگا ہوگیا ہے کہ لوگ اب موٹر سائیکل اور کار چلانے کے بجائے سائیکل پر سفر کرناشروع کردیں گے انہوں نے کہا کہ سی این جی اور گھریلو صارفین کے لئے گیس کی قیمتوں میں اضافہ فوراََ واپس لیا جائے کیونکہ حکومت نے گیارہ ماہ میں تین بجٹ دے کر ہر چیز مہنگی کردی ہے کوکب اقبال نے کہا کہ جب عوام کی قوت خرید ہی نہیں رہے گی تو لوگ بھوکے مر نا شروع ہوجائیں گے حکومت جس شرح سے مہنگائی میں اضافہ کر رہی ہے وہ اسی طرح سے عوام کے ذرائع آمدن میں بھی اضافہ کرے اور عوام کی تنخواہوں اور پینشنز میں بھی سو فیصد اضافہ کیا جائے چونکہ بوڑھے پینشنر ز کی پوری پینشن تو دل،بلڈ پریشر،شوگر اور دیگر بیماریوں کی ادویہ خرید نے کی نظر ہوجاتی ہے تو وہ روٹی کہاں سے کھائیں گے انہوں نے کہا کہ عوام کی استعدادکودیکھتے ہوئے ان پر ٹیکسوں کا بوجھ ڈا لا جائے جب عوام زندہ ہی نہیں رہیں گے تو حکومت ٹیکس کس سے لے گی کوکب اقبال نے کہا کہ عوام کو ریلیف دینے کے بجائے ان پر طرح طرح کے ٹیکس لگا ئے جارہے ہیں جس سے عوام میں مایوسی اور بد دلی پھیلتی جا رہی ہے انہوں نے کہا کہ عوام نے پانی کی شدید قلت کے باعث گھر وں میں بورنگ کر الی ہے بجلی کی لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے یو پی ایس اور جرنیٹرز کا استعمال کیا جا تا ہے جبکہ گیس کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کی وجہ سے وہ گیس کے چولہے جلانے کے بجائے لکڑی جلانا شروع کردیں گے اور سبزیاں مہنگی ہونے کے باعث وہ گھروں میں سبزیاں بھی اگانے لگیں گے چونکہ وہ مہنگی سبزیاں نہیں خرید سکتے اس لئے کہ اب غریب عوام کو پیٹ پالنا مشکل ہوگیا ہے۔
 حکومت عوام کا معیار زندگی بلندکرنے کے بجائے اسے پست سے پست کر رہی ہے کوکب اقبال نے کہا کہ لگتا ہے کہ پاکستان کی عوام کو پتھر کے دور میں دھکیلا جا رہا ہے ملک قرضوں کے بوجھ تلے دبا دیا گیا ہے ڈالر کے ریٹ کو بڑھنے اور کنٹرول کرنے کے لئے کسی طرح کے اقدامات نہیں کئے جارہے ہیں جس سے ملک پر غیر ملکی قرضوں میں اضافہ ہی ہوتا جارہا ہے

مزید :

کامرس -