عوامی شکایات کے حل میں دانستہ تاخیرپر بلاتفریق فوری کارروائی ہوگی: آئی جی پنجاب

عوامی شکایات کے حل میں دانستہ تاخیرپر بلاتفریق فوری کارروائی ہوگی: آئی جی ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(کر ائم رپورٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب کیپٹن (ر) عارف نواز خان نے کہا ہے کہ عوام کی جان وما ل کے تحفظ کے ساتھ انکی شکایات کا بروقت ازالہ پنجاب پولیس کی اولین ترجیح ہے چنانچہ تمام آر پی اوز، ڈی پی اوز اپنے اضلاع کے مختلف علاقوں اور تھانوں میں کھلی کچہریوں کے انعقادمیں مزید تیزی لائیں تاکہ شہریوں کی شکایات کے فوری ازالے کیلئے ہر ممکن اقدامات کو یقینی بنایا جا سکے۔ انہوں نے مزید کہا کہ عوامی شکایات کے حل میں دانستہ تاخیر کے ذمہ داران افسران واہلکارکسی رعائیت کے مستحق نہیں اور مجھے جہاں کہیں سے بھی ایسی شکایت موصول ہوئی ذمہ داروں کے خلاف بلا تفریق فوری کاروائی ہوگی۔ انہوں نے ہدایت دیتے ہوئے مزید کہا کہ تمام ڈی پی اوز کھلی کچہریوں میں موصول ہونے والی شکایات اور انکے ازالے کیلئے کئے گئے اقدامات کی ہفتہ واررپورٹس باقاعدگی سے سنٹرل پولیس آفس بھی بھجوائیں۔ انہوں نے مظفر گڑھ، قصور،سرگودھا، چکوال اور جھنگ کے ڈی پی اوزکو شہریوں کے مسائل حل کیلئے فوری اقدامات کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ پولیس فورس کے پاس بہترین پرفارمنس سے عوامی شکایات کے فوری حل کے سوا کوئی دوسرا راستہ نہیں چنانچہ ضلعی افسران بروقت اور موثر اقدامات کی بدولت مقامی سطح پرہی عوامی مسائل کا حل اپنی ذاتی نگرانی میں ہر صورت ممکن بنائیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سنٹرل پولیس آفس لاہور میں منعقدہ کھلی کچہری کے دوران افسران کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کیا۔
آئی جی پنجاب نے شہری غلام رسول کی شکایت پر ڈی ایس پی عارف والا کوریکارڈکے ساتھ آئی جی آفس آنے کا حکم جاری کرتے ہوئے کہا کہ مثل مقدمہ ساتھ لا کر انہیں بتایا جائے کہ اب تک اس کیس کا چالان کیوں مکمل نہیں کیا گیا۔ خاتون عذرا بی بی کی درخواست پرآئی جی پنجاب نے ڈی پی او مظفر گڑھ کو ملزمان کو 48گھنٹے میں گرفتار کرنے کے احکامات جاری کئے جبکہ سائلہ صابرہ بی بی کی بیٹی کے قتل میں ملوث ملزموں کو گرفتاری میں تاخیر پر آئی جی پنجاب نے اظہار برہمی کرتے ہوئے ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہورکو مثل مقدمہ چیک کرکے 24گھنٹوں میں رپورٹ سی پی او بھجوانے کا حکم دیا، تاخیر کے ذمہ داروں کے خلاف فوری کاروائی عمل میں لائی جائے۔ کھلی کچہری کے دوران آئی جی پنجاب نے قصور، چکوال اور جھنگ سے موصول ہونے والی شکایات پر انکے ڈی پی اوز کو ٹیلی فون پر ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ متاثرہ شہریوں کے مسائل جلد از جلد حل کرکے سنٹرل پولیس آفس رپورٹ بھجوائی جائے۔کھلی کچہری میں ڈی آئی جی آئی اے بی احسن یونس اور اے آئی جی کمپلینٹس زاہد نواز مروت سمیت 8787آئی جی پی کمپلینٹ سروس کا سٹاف بھی موجود تھا۔

مزید :

علاقائی -