دکھی انسانیت کی خدمت معاشرے کا نصب العین ہونا چاہئے،پختونخوا ریڈیو میں مذاکرہ

دکھی انسانیت کی خدمت معاشرے کا نصب العین ہونا چاہئے،پختونخوا ریڈیو میں ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


پشاور( سٹاف رپورٹر)دکھی انسانیت کی بے لوث خدمت ہر معاشرے کا نصب العین ہونا چاہئے اور اسے محض حکومت کا کام سمجھ کر نظر انداز کرنا معاشرتی زوال کا باعث بن سکتا ہے یتیم بچوں اور بیواو¿ں کو سپورٹ کرنا اور ان کو زندگی کی تگ ودو میں دیگر انسانوں کی طرح باعزت چلنا سکھانا ہمارا مشن ہے ہمارے خدمت خلق سے سرشار رضاکار سوات سمیت ملاکنڈ ڈویژن کے تمام اضلاع میں اس مشن کیلئے شبانہ روز کوشاں ہیں ان خیالات کا اظہار اخلاص فاو¿نڈیشن کے چیئرمین الیاس سہارا نے پختونخوا ریڈیو کے پروگرام ”رنگونہ د سوات“ کے زیر اہتمام مذاکرہ میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ ہم نے یتیموں کیلئے ”دیتیم آواز“ کے نام سے امدادی پروگرام شروع کیا ہے اور اب تک 78 یتیموں کو سکول میں داخل کرایا اور انکی اعلیٰ تعلیم تک سہولیات کا بندوبست کیا جبکہ ان کیلئے اخلاص کے نام سے اسکول بھی قائم کیا ہے جن میں 143وہ طلباءو طالبات بھی زیر تعلیم ہیں جن کا تعلق انتہائی غریب خاندانوں سے ہے اس کے ساتھ ہم ان یتیم گھرانوں کو مالی اور غذائی ضروریات کے لحاظ سے سپورٹ بھی کرتے ہیں ان گھرانوں کیلئے خود روزگاری اور کاروبار کا منصوبہ بھی شروع کیا گیا ہے جنہیں گاڑیوں سے لیکر سلائی مشین تک دی جاتی ہے جن سے اب ان کا باعزت طور پر گزارہ ہوتا ہے انہوں نے کہا کہ ہر انسان کو چاہئے کہ وہ اپنے معاشرے کے غریب طبقے پر نظر رکھے باالخصوص ہمارے باہمت نوجوان آگے آئیں اور یتیم بچوں کو تعلیم کی روشنی سے منور کریں انہوں نے کہا کہ اخلاص فاو¿نڈیشن کے رضاکار یتیم بچوں اور بیواو¿ں سمیت غریب گھرانوں کی صحت، روزگاراور تعلیم پر کام کرتے ہیں اور ابھی تک کافی مستحق لوگوں تک پہنچ کر ان کی مدد اور خدمت کی ہے الیاس سہارا نے حکومت کے ترقیاتی اقدامات، سفروسیاحت اور تفریح و کھیلوں کی سرگرمیوں کوا جاگر کرنے کے ساتھ ساتھ معاشرے اور عوامی شعور کی بیداری کے سلسلے میں فعال کردار ادا کرنے پر پختونخواریڈیو کی بیحد تعریف کی۔