بھارت،خاتون آفیسر پر لاٹھیوں سے حملہ، 16افراد گرفتار

بھارت،خاتون آفیسر پر لاٹھیوں سے حملہ، 16افراد گرفتار

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


نئی دہلی(آئی این پی)بھارت کی جنوبی ریاست تیلنگانا میں خاتون فارسٹ افسر کو ہجوم کی جانب سے لاٹھیوں سے تشدد کا نشانہ بنانے کے الزام میں 16 افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ اس واقعے کے وقت مقامی پولیس افسران بھی وہاں موجود تھے۔اس ہجوم کی سربراہی علاقے کی برسراقتدار پارٹی کے ایک رہنما کر رہے تھے۔ وہ علاقے میں شجرکاری مہم کے خلاف احتجاج کر رہے تھے۔اس واقعے کی ویڈیو وائرل ہو گئی تھی اور پارٹی کے صدر نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اس واقعے کی مذمت کی ہے۔فارسٹ افسر کو شدید چوٹیں آئی ہیں اور وہ ہسپتال میں زیر علاج ہیں۔ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ فارسٹ افسر کو ہجوم کی جانب سے بانس کے ڈنڈوں سے نشانہ بنایا جا رہا ہے جبکہ وہ اس دوران ٹریکٹر پر کھڑی ہو کر عوام کو تسلی دینے کی کوشش کر رہی ہیں۔ان پر بار بار ڈنڈوں کے وار کیے جاتے رہے پھر مقامی پولیس نے ہجوم کو منتشر کیا۔یہ ویڈیو پورے انڈیا میں وائرل ہو گئی اور پورے ملک میں اس کی مذمت کی گئی۔اس کے ردعمل میں تیلنگانا راشتڑا سمیتی پارٹی کے سینئر رہنما کلواکنتلہ تراکا راما را نے ٹوئٹر پر اس کی مذمت کی۔اس ہجوم کی سربراہی اس پارٹی کے مقامی رہنما کے بھائی کونیرو کرشنا را کر رہے تھے۔ پارٹی نے تصدیق کی ہے کہ انھیں بھی گرفتار کیا گیا ہے

مزید :

عالمی منظر -