”ہم مغربی یورکشائر پولیس کے ساتھ مل کر یہ پتہ لگائیں گے کہ یہ کیسے ہوا تاکہ۔۔۔“ برطانیہ نے پاکستان اور افغانستان کے میچ کے دوران پراپیگنڈا بینرز لہرائے جانے کا نوٹس لے لیا

”ہم مغربی یورکشائر پولیس کے ساتھ مل کر یہ پتہ لگائیں گے کہ یہ کیسے ہوا ...
”ہم مغربی یورکشائر پولیس کے ساتھ مل کر یہ پتہ لگائیں گے کہ یہ کیسے ہوا تاکہ۔۔۔“ برطانیہ نے پاکستان اور افغانستان کے میچ کے دوران پراپیگنڈا بینرز لہرائے جانے کا نوٹس لے لیا

  


لندن(ویب ڈیسک) برطانوی وزارتِ خارجہ نے لیڈز میں پاکستان اور افغانستان کے درمیان میچ میں جہاز کے ذریعے سیاسی نوعیت کے بینرز لہرائے جانے کا نوٹس لے لیا۔ترجمان وزارتِ خارجہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ ہم کرکٹ ورلڈ کپ کے دوران کسی بھی سیاسی نوعیت کے پیغام کی حمایت نہیں کرتے اور ہم مغربی یورکشائر پولیس کے ساتھ مل کر یہ پتہ لگائیں گے کہ یہ کیسے ہوا تاکہ آئندہ اس قسم کا کوئی دوسرا واقعہ نہ ہو۔ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ پاک افغان شائقین کے مابین پ±رتشدد واقعات پر تشویش ہے، برطانیہ پاکستان کی علاقائی سالمیت کی حمایت اور اسے قدر سے دیکھتا ہے، ہم آزادیِ اظہار اور پ±ر امن احتجاج کو تسلیم کرتے ہیں لیکن پ±رتشدد واقعے کے بارے میں پولیس تحقیقات کر رہی ہے۔یاد رہے کہ 29 جون کو لیڈز میں پاکستان اور افغانستان کے میچ کے دوران گراو¿نڈ کے اوپر جہازوں کے ذریعے بینرز لہرائے گئے جن پر پاکستان مخالف پروپیگنڈے پر مبنی جملے درج تھے۔اس حوالے سے پاکستان نے ایک خاص گروہ کی جانب سے بینرز لہرائے جانے پر پر تحفظات کا اظہار بھی کیا تھا۔

مزید : برطانیہ