مقبوضہ کشمیر،قابض فوج نے 2نہتے نوجوانوں کو شہید کردیا،ماہ جون میں 54شہادتیں 25گھروں کو مسمار کیا گیا

  مقبوضہ کشمیر،قابض فوج نے 2نہتے نوجوانوں کو شہید کردیا،ماہ جون میں 54شہادتیں ...

  

راجوڑی (مانیٹرنگ ڈیسک) مقبوضہ وادی میں کشمیریوں کی نسل کشی جاری ہے۔ بھارتی فوج نے ضلع راجوڑی میں مزید 2 کشمیریوں کو شہید کر دیا گیا۔ تین روز میں شہدا کی تعداد 7 ہو گئی۔مقبوضہ کشمیر میں بھارتی قابض فوج کی جانب سے بربریت جاری ہے۔ قابض فوج نے 2 نوجوانوں کو ضلع راجوڑی کے علاقے کیری میں سرچ آپریشن کی آڑ میں شہید کر دیا۔ علاقے میں انٹرنیٹ اور موبائل سروس بند کر کے گھر گھر تلاشی بھی لی گئی۔ ظالمانہ کارروائی کے خلاف کشمیریوں نے احتجاج کیا۔ تین روز کے دوران شہدا کی تعداد 7 ہوگئی۔کشمیر میڈیا سروس نے جون میں ہونیوالے بھارتی سفاکیت کی رپورٹ جاری کر دی۔ رپورٹ کے مطابق گذشتہ مہینے میں 54 کشمیریوں کو شہید کیا گیا، شہدا میں دو بچے بھی شامل تھے۔ 82 افراد کو گرفتار کیا گیا، 29 کشمیری بھارتی فوج کی گولیوں سے زخمی بھی ہوئے، دو خواتین بیوہ ہوئیں، 5 بچے یتیم ہوئے اور کشمیریوں کے 25 گھروں کو تباہ بھی کیا گیا۔

مقبوضہ کشمیر

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان میں بھارت کے ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کرکے کنٹرول لائن کے ساتھ بھارتی قابض افواج کی جانب سے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیوں پر شدید احتجاج ریکارڈ کرایا گیا ہے۔ دفتر خارجہ کی ترجمان عائشہ فاروقی نے بتایا کہ گزشتہ دو روز کے دوران کنٹرول لائن کے کیانی اور Jura سیکٹروں میں بھارتی فوج کی اندھا دھند اور بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں ایک بے گناہ شہری شہید اور پانچ زخمی ہوئے جس پربھارتی ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کرکے احتجاجی مراسلہ تھما دیا گیا۔ مراسلے میں کہا گیا ہے کہ بھارت کی طرف سے 29 اور 30 جون کو ایل او سی پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیاں کی گئیں۔ بھارتی بلا اشتعال فائرنگ سے ایک شہری شہید اور پانچ زخمی ہوئے۔ بھارت ایل او سی پر سیز فائر معاہدے کی پاسداری کرے۔واضح رہے کہ بھارت کی جانب سے رواں سال ایل او سی پر اب تک 1546 مرتبہ جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیاں کی گئی ہیں۔ اس دوران 14 افراد شہید جبکہ 114 زخمی ہوئے ہیں۔

دفتر خارجہ طلبی

مزید :

صفحہ اول -